پٹرول کی قیمت ایک دفعہ پھر اضافہ
31 اکتوبر 2019 (22:14) 2019-10-31

اسلام آباد:وفاقی حکومت نے پٹرول کی قیمت میں اضافہ کردیا ، وزارت خزانہ نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ردوبدل کا نوٹی فکیشن جاری کردیا جس کے مطابق پیٹرول کی قیمت میں ایک روپے،ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 27 پیسے فی لیٹر اضافہ ہوگیا جبکہ لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 6 روپے 56 پیسے، مٹی کے تیل کی قیمت میں 2 روپے 39 پیسے کمی کی گئی ، نئی قیمتوں کا اطلاق جمعرات او ر جمعہ کی درمیانی شب 12 بجے سے ہوگیا ۔

جمعرات کو وزارتِ خزانہ کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 6 روپے 56 پیسے کمی کی گئی ہے جس کے بعد لائٹ ڈیزل کی نئی قیمت85روپے 33 پیسے فی لیٹر ہوگئی ہے ، مٹی کے تیل کی قیمت میں 2 روپے 39 پیسے کمی کی گئی ہے جس کے بعد مٹی کے تیل کی نئی قیمت 97 روپے18 پیسے فی لیٹر ہوگئی ہے ۔اعلامیے کے مطابق پیٹرول کی قیمت میں ایک روپے کا اضافہ کیا گیا جبکہ ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت 27 پیسے بڑھا دی گئی جس کے بعد ہائی اسپیڈ ڈیزل کی نئی قیمت 127روپے41 پیسے فی لیٹر ہوگئی ہے ۔

نئی قیمتوں کا اطلاق یکم نومبر کی رات 12 بجے شروع ہو گیا۔یاد رہے کہ گزشتہ روز آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی )اوگرا( نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی سمری حکومت کو ارسال کی گئی تھی جس میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 6 روپے 56 پیسے فی لیٹر تک ردو بدل کی تجویز دی گئی تھی۔پٹرولیم ڈویژن کو سمری گزشتہ روز ہی موصول ہوگئی تھی جس کے بعد اسے وزارتِ خزانہ کو ارسال کیا گیا، اوگرا نے پٹرول کی قیمت میں ایک روپے، ایچ ایس ڈی کی قیمت میں 27پیسے فی لیٹر اضافے کی سفارش کی تھی۔

اسی طرح سمری میں مٹی کے تیل کی قیمت میں 2روپے 39پیسے فی لیٹر کمی، لائٹ ڈیزل کی قیمتوں میں 6روپے 56پیسے فی لیٹر کمی کی تجویز دی دی گئی۔یاد رہے گزشتہ ماہ حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا تھا ، وزارت خزانہ کا کہنا تھا کہ اکتوبر کے مہینے میں ستمبر کی قیمتیں برقرار رہیں گی تاہم ماہ اکتوبر میں عالمی منڈی میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا امکان ظاہر کیا گیا تھا۔


ای پیپر