حکومت آئی ایم ایف کے پاس گئی تو مہنگائی کا طوفان آئیگا : پیپلز پارٹی
31 اکتوبر 2018 (15:01) 2018-10-31

اسلام آباد: پیپلز پارٹی کے رہنما ؤ ں نے کہا ہے کہ حکومت اپنی نا اہلی چھپانے کیلئے پچھلی حکومتوں کی کارکردگی کے پیچھے چھپ رہی ہے، حکومت آئی ایم ایف کے پاس گئی تو ملک میں مہنگائی کا نیا طوفان آئے گا،2008میں پیپلز پارٹی کی حکومت آئی تو حالات اس سے زیادہ خراب تھے، حکومت نے2ماہ میں مہنگائی اتنی بڑھا دی ہے5سال تک تو غریب کو ختم ہی کر دے گی،۔ملک تیزی سے مہنگائی کی جانب بڑھ رہا ہے حکومت کو سنجیدی اقدامات کرنے ہوں گے،۔قائمہ کمیٹیاں بنانے کے معاملے سپیکر قومی اسمبلی کے ساتھ مشاورت جاری ہے۔

پیپلز پارٹی کے رہنما نوید قمر اورشازیہ مری پارلیمنٹ ہا ؤ س کے باہر میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔ نوید قمر نے کہا کہ قومی اسمبلی کا موجودہ اجلاس حکومت کی سفارش پر معیشت پر بحث کرنے کیلئے بلایا گیا لیکن حکومت اتنی غیر سنجیدہ ہے کہ ان کے وزیر خزانہ ہی ایوان میں نہیں آتے۔ اپوزیشن کے احتجاج پر وزیر خزانہ ایوان میں آئے اور تقریر کر کے چلے گئے۔ وزیر خزانہ نے یہ بھی ضروری نہیں سمجھا کہ اپوزیشن کی تجاویز ہی لے لیں حکومت کو لگتا ہے کہ وہ سب ٹھیک کر رہے ہیں اور پچھلی حکوتوں نے صرف غلطیاں ہی کی ہیں۔ حکومت حالات کی خرابی کا بہانہ بنا کر عوام پر مہنگائی کا بوجھ ڈال رہی ہے۔2008میں جب پیپلز پارٹی کی حکومت آئی تو حالات اس سے زیادہ خراب تھے لیکن حکو مت نے سنجیدگی سے اقدامات کیے اور بینظیر انکم سپورٹ پروگرام شروع کیا گیا جس میں غریبوں کو سبسڈی دی گئی ۔2008میں تیل کی فی بیرل قیمت148ڈالر تھی جو آج30ڈالر فی بیرل ہے۔ حکومت نے گیس، بجلی، پٹرول کی قیمتیں بڑھادی ہیں لیکن پھر بھی کہتی ہے کہ غریبوں پر بوجھ نہیں پڑے گا۔پتہ نہیں عمران خان کے پاس کون سے غریب ہیں جن پر مہنگائی کا اثر نہیں ہورہا۔ حکومت اپنی نا اہلی چھپانے کیلئے پچھلی حکومتوں کی کارکردگی کے پیچھے چھپ رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت نے2ماہ میں مہنگائی اتنی بڑھا دی ہے5سال تک تو غریب کو ختم ہی کر دے گی۔ حکومت نے اگر معاشی بحران سے نکلنا ہے تو اپوزیشن سے تجاویز لے اور اپوزیشن کے ساتھ ملکر کام کرے۔ملک تیزی سے مہنگائی کی جانب بڑھ رہا ہے حکومت کو سنجیدی اقدامات کرنے ہوں گے۔قائمہ کمیٹیاں بنانے کے معاملے سپیکر قومی اسمبلی کے ساتھ مشاورت جاری ہے امید ہے جلد قائمہ کمیٹیاں بنا دی جائیں گی۔ پیپلز پارٹی کی رہنما شازیہ مری نے کہا کہ حکومت کی سنجیدگی کا مظاہرہ ان کی پارلیمنٹ میں موجودگی سے لگایا جا سکتا ہے۔ حکومت ہر فیصلے پر یو ٹرن لے رہی ہے ان سے کسی بڑا فیصلہ لینے کی توقع کیسے کر سکتے ہیں۔ حکومت کے پاس نہ کوئی منصوبہ بندی ہے اور نہ کوئی وژن۔اب حکومت آئی ایم ایف کے پاس گئی تو ملک میں مہنگائی کا نیا طوفان آئے گا۔


ای پیپر