Photo Credit Twitter

صدرِمملکت کے 25 ویں آئینی ترمیم پر دستخط‘ قبائلی علاقے خیبر پختونخوا کا حصہ بن گئے
31 مئی 2018 (15:45)

اسلام آباد:صدر مملکت ممنون حسین کے 25 ویں آئینی ترمیم پر دستخط کے بعد قبائلی علاقے باضابطہ طور پر خیبرپختون خوا کا حصہ بن گئے، صدر مملکت ممنون حسین نے کہا ہے کہ فاٹا کے انضمام سے خطے میں استحکام پیدا ہو گا،فاٹا کی تر قی اور خوشحالی کے دروازے کھل گئے ہیں۔

جمعرات کو صدرِمملکت ممنون حسین نے 25 ویں آئینی ترمیم پر دستخط کر دیئے ہیں جس کے بعد قبائلی علاقے خیبر پختون خوا کا حصہ بن گئے۔ دستخط کی تقریب میں گورنر اقبال ظفر جھگڑا ، سرتاج عزیز ، بیرسٹر ظفر اللہ خان اور جنرل ناصر جنجوعہ نے شرکت کی۔

اس موقع پر صدر ممنون حسین فاٹا کے انضمام پر سابقہ قبائلی عوام کو مبارک باد پیش کی اور خطاب کرتے ہوئے کہ سابقہ قبائلی عوام کو پاکستان کے دیگر شہریوں کی طرح آئینی حقوق حاصل ہو گئے ہیں اور انضمام کے بعد فاٹا کی تر قی اور خوشحالی کے دروازے کھل گئے ہیں اور خطے میں استحکام پیدا ہوگا۔

سرتاج عزیز نے کہا کہ سابقہ ایجنسیاں اضلاع میں بدل گئیں ہیں اور اسسٹنٹ پولیٹیکل ایجنٹس اب ڈپٹی کمشنر کہلائیں گے، نئے اضلاع میں جدید سہولتوں کی فراہمی کے لیے 1000 ارب روپے خرچ کیے جائیں گے۔


ای پیپر