سرے محل کیسے خریدا ؟شبلی فراز کی انتہائی اہم گفتگو
31 جولائی 2020 (21:26) 2020-07-31

اسلام آباد :وفاقی وزیراطلاعات ونشریات شبلی فرازنے کہا ہے کہ اپوزیشن حکومت پر پریشر ڈال رہی ہے لیکن عمران خان کسی صورت کمپرومائز نہیں کریں گے۔ بلاول بھٹو لاکھ کوشش کرلیں،این آراو نہیں ملے گا۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ فیٹف قانون سازی پاکستان کے لیے ہے لیکن اپوزیشن اسے نیب ایکٹ سے منسلک کر دیتی ہے۔ان کی ترامیم کو پڑھیں گے تو ہنسی ضرورآئے گی۔ ان کا بنیادی مقصد این آراو ہے۔ یہ کرپشن کو اپنی نظر سے قانون بنانا چاہتے ہیں۔ اپوزیشن کی ترامیم ردی کی ٹوکری میں ڈالی جائیں گی۔

شبلی فرازنے کہا کہ بلاول بھٹو شیشے کے گھر میں رہ کر دوسروں کے گھروں میں پتھر پھینک رہے ہیں۔ انہوں نے وزیراعظم عمران خان کو تنقید کا نشانہ بنایا۔ وہ یا تولاعلم ہیں یا سب کچھ جانتے ہوئے جھوٹ بولتے ہیں،وفاقی وزیرکا کہنا تھا کہ وزیراعظم اوران کی فیملی نے محنت سے اثاثے بنائے۔ ان کے پاس وہ اثاثے نہیں جو بلاول بھٹو کے پاس ہیں۔عمران خان نے کرکٹ کی تمام کمائی کا ریکارڈ عدالت کو دیا۔

انہوں نے چئیرمین پیپلز پارٹی پرتنقید کرتے ہوئے کہا کہ بلاول بھٹو کے پاس کرپشن پر سوال کرنے کا اخلاقی جواز نہیں ۔ وہ بتائیں کہ سرے محل کیسے خریدا گیا؟ سوئس اکاؤنٹ کا کیا ہوا؟اومنی گروپ کیلیے منی لانڈرنگ کس نے کی؟ بلاول بھٹوکوان سوالوں کا جواب اپنی فیملی سے مل جائے گا۔


ای پیپر