پچاس 50لاکھ گھروں کا منصوبہ گوادر کے مچھیروں سے شروع کریں گے:وزیر اعظم
31 جولائی 2019 (18:43) 2019-07-31

اسلام آباد:وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ 50لاکھ گھر بنانا آسان کام نہیں تاہم معیشت کو چلانے کے لیے یہ اہم منصوبہ ہے، 50لاکھ گھروں کا منصوبہ گوادر کے مچھیروں سے شروع کریں گے، چیف جسٹس گھروں سے متعلق فوری کیس لگوائیں اور جوکیس 8،9ماہ سے لٹکا ہے اسے سنیںلوگوں کی اکثریت پیسے نہ ہونے کی وجہ سے اپنے گھر نہیں بنا سکتے ۔

عمران خان نے کہا گزشتہ 10سالوں میں ملک میں بدترین لوٹ مار کی گئی اور ملک کو بے رحمی سے لوٹا گیا، جس کی وجہ سے خزانہ خالی ہے اور اب ہمیں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، اس کے باوجود ہم نے 50لاکھ گھروں کی تعمیر کا فیصلہ کیا۔اسلام آباد میں نیا پاکستان ہاﺅسنگ پروگرام سے متعلق مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ گزشتہ حکومتوں نے بہت لوٹ مار کی، ماضی کی لوٹ مار کی وجہ ملکی خزانے میں پیسے نہیں تاہم 50لاکھ گھروں کا منصوبہ گوادر کے مچھیروں سے شروع کریں گے۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ملک میں اس وقت سوا کروڑ گھروں کی قلت ہے، نیا پاکستان ہاﺅسنگ اسکیم کا مقصد ون ونڈو آپریشن ہے، ہاﺅسنگ اسکیم کے لیے مقامی وسائل استعمال ہوں گے، دنیا کی نسبت پاکستان میں بینک سب سے کم گھروں کے لیے پیسہ دیتے ہیں، ان لوگوں کو گھر بنانے کا موقع دیں گے جن کے پاس وسائل نہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ گھروں کے لئے لوگوں کو آسان قسطوں پر پیسے دیں گے اور سود کم رکھیں گے، عدالت کی طرف سے اجازت کے بعد بینک قرضے دینا شروع کریں گے، کم تنخواہ دار طبقے کے لیے گھر بنانا آسان ہوجائے گا، معیشت کو چلانے کے لیے بھی یہ اہم منصوبہ ہے جب کہ کوئی بھی بڑا کام آسان نہیں ہوتا اور 50لاکھ گھر بنانا بھی آسان کام نہیں، مشاورت ہورہی ہے کہ کیسے گھر بنانے کے لیے قرض پر کم سے کم سود ہو جبکہ کنسٹرکشن کمپنیوں کے لیے آسانیاں پیدا کریں گے۔انہوں نے کہا کہ ہاﺅسنگ منصوبے سے 40صنعتیں براہ راست منسلک ہیں اس سے لوگوں کو روزگار میسر ہو گا اور معیشت مضبوط ہو گی۔


ای پیپر