Source : File Photo

جاوید میانداد نے گزشتہ روز دئیے ویڈیو پیغام پر وضاحت دیدی
31 جولائی 2018 (23:45) 2018-07-31

کراچی: جاوید میانداد نے کل دئیے گئے ویڈیو پیغام پر وضاحت دے دی۔معروف سابق کرکٹر اور قومی ہیرو جاوید میانداد کا کہنا تھا کہ میرے کل کے بیان کو توڑ مروڑ کر پیش کیا گیا،ایک شخص20 سال سے جدوجہد کرتا آیا میں اس کے خلاف بات کروں گا؟سب کو پتا ہے کہ چور کون ہے۔

تفصیلات کے مطابق 25 جولائی کو انعقاد پذیر ہونے والے انتخابات کے نتیجے میں پاکستان تحریک انصاف وفاق کی سب سے بڑی جماعت بن کر سامنے آئی تھی اور عددی اعتبار سے پاکستانی کی سب سے بڑی پارٹی بن کے ابھری تھی۔پاکستان تحریک انصاف کے پاس قومی اسمبلی کی 115 نشستیں آئی تھیں جس کے بعد یہ بات طے ہو گئی تھی کہ وفاق میں پاکستان تحریک انصاف حکومت بنائے گی۔تاہم اس حوالے سے پاکستان تحریک انصاف کو نمبر گیم پوری کرنے کے لیے پاکستان تحریک انصاف کو اتحادیوں کی ضرورت تھی جس کے لیے ابھی تک جوڑ توڑ کا سلسلہ جاری ہے۔اس حوالے سے مختلف حلقوں سے اس سارے عمل پر مختلف ردعمل ظاہر کیا جارہا ہے۔معروف سابق کرکٹر جاوید میانداد موجودہ سیاسی جوڑ توڑ پر آبدیدہ ہوگئے تھے۔

گزشتہ روز منظر عام پر آنے والے ویڈیو پیغام میں جاوید میانداد کا کہنا تھا کہ میں آج ان عوا م سے مخاطب ہوں جنہوں نے ووٹ دیا ہے،یار تم اپنی بولیاں لگوا رہے ہو ،ایسے کیا ملک سنبھالو گے۔انکا کہنا تھا کہ آج ہر الیکٹ ہونے والا یہ سوچ رہا ہے کہ مجھے کیا ملے گا میں کیا دوں گا۔انکا کہنا تھا کہ اگر تم پیسے لے دے کر آو گے تو کیا کرو گے۔اس موقع پر بات کرتے ہوئے جاوید میانداد آبدیدہ ہو گئے۔انکا کہنا تھا کہ یہاں لوگوں کے پاس کھانے کو نہیں ،بچے سکول نہیں جارہے ،تم سب کو شرم آنی چاہیے کہ تم لوگ پیسے دے کر ایک دوسرے کو خرید رہے ہو۔سننے والوں کو یہ پیغام عمران خان کے خلاف نظر آرہا تھا تاہم اس موقع پر جاوید میانداد نے کل دئیے گئے ویڈیو پیغام پر وضاحت دے دی۔انکا کہنا تھا کہ میرے کل کے بیان کو توڑ مروڑ کر پیش کیا گیا۔ایک شخص نے نئے پاکستان کے لیے نعرہ لگایا اور محنت کی۔

نئے پاکستان کا نعرہ لگانے والے کے خلاف جوڑ توڑ ہورہی ہے۔انکا کہنا تھا کہ عمران خان کے ساتھ20 سال رہا ہوں عمران کی میں ضمانت دیتا ہوں۔میرے بچوں اورمیں نے بھی عمران خان کوووٹ دیا ہے۔ جاوید میانداد نے کہا کہ غلط باتیں مجھ سے منسوب کی جارہی ہیں یہ مناسب نہیں۔آپ کو پتا ہے کہ کون چور ہے اور کس نے پیسا استعمال کیا ہے۔انکا مزید کہنا تھا کہ ایک شخص20 سال سے جدوجہد کرتا آیا میں اس کے خلاف بات کروں گا۔الیکشن میں عمران خان کو اکثریت ملی ہے تو حکومت اسی کو بنانی چاہیے۔


ای پیپر