US Forces in China Sea
31 دسمبر 2020 (18:37) 2020-12-31

بیجنگ: چینی فوجی ترجمان نے آبنائے تائیوان کے ذریعے 2امریکی بحری جنگی جہازوںکی آمد پر اپنا شدید احتجاج ریکارڈ کرواتے ہوئے کہا کہ امریکہ چین کی سمندر ی حدود سے دور رہے ورنہ چین اپنی سمندری حدود کی حفاظت کرنا خوب جانتا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق آبنائے تائیوان کے ذریعے امریکی جنگی جہاز وں کی آمد پر چینی وزارت خارجہ نے امریکہ سے اپنا احتجاج ریکارڈ کرواتے ہوئے کہا کہ امریکی جنگی جہازوں کے اس اقدام سے علیحدگی پسند عناصر کو تائیوان کی آزادی کی حمایت کرنے اور آبنائے تائیوان پر امن واستحکام کو شدید خطرے میں ڈالنے کیلئے ایک غلط اشارہ دیا گیا ہے۔

 امریکی جنگی جہاز آبنائے تائیوان کے راستے سے فارمیشن میں روانہ ہوئے،اس کے جواب میں چینی پیپلزلبریشن آرمی(پی ایل اے) نے بحری اورفضائی دستوں کو اس سارے عمل کا سراغ لگانے اور نگرانی کیلئے روانہ کر دیا ہے ۔چینی فوجی ترجمان  نے کہاکہ 18دسمبر کو آبنائے تائیوان کے ذریعے ایک امریکی جنگی جہاز کے سفر کے بعد امریکی جہازوں کی جانب سے طاقت آزمانے اور اشتعال انگیزی کی یہ ایک اور حرکت ہے۔

چینی فوج کے ترجمان نے  کہاکہ پیپلز لبریشن آرمی قومی خودمختاری اورعلاقائی سالمیت کے مستقل تحفظ کیلئے تمام خطرات اور اشتعال انگیزیوں سے نمٹنے کیلئے ہمہ وقت چوکس اور تیار رہے گی۔


ای پیپر