Important news about Indian Muslims
31 دسمبر 2020 (16:44) 2020-12-31

نئی دہلی :مودی کے پیروکاروں نے رواں سال کااختتام بھی مسلم مخالف اقدامات شروع کر کے ہی کیا ،گزشتہ سال بھی اگست میں کشمیریوں پر شب خون مارا اور اب سال 2020 کے آخری دن بھی مودی نے بھارتی مسلمانوں پر زمین تنگ کر دی ۔

تفصیلات کے مطابق مودی کے پیروکاروں نے رواں سال کااختتام بھی مسلم مخالف اقدامات سے کیا،مسجد  اور گردو نواح میں مسلمانوں کے  گھروں کو بھی نقصان پہنچایا،بھارتی تاریخ میں یہ پہلی دفعہ ہوا ہے جب ہندو انتہا پسند بے لگام ہو چکے ہیں ،رواں سال کا اختتام بھی  مسلمان مخالف اقدامات پرہورہاہے، ہندوانتہاپسندوں  نے مدھیا پردیش میں دو مساجد پر دھاوا بول دیا،مسجد  اور گردو نواح میں مسلمانوں کے  گھروں کو بھی نقصان پہنچایا،فاشسٹ مودی حکومت کے دور میں بھارتی  مساجد غیر محفوظ ہو چکی ہیں ۔

ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کے لیے فنڈز اکٹھے کرنے کی آڑ لے کر انتہاپسندوں نے ضلع 'مندسورکے گاؤں 'ڈورانا اور 'اِندور شہر میں مساجد پر حملے کیے،انتہاپسند وں نے  باجماعت نماز کے دوران  'ہنومان چلیسا پڑھا اور جے شری رام 'جیسے نعرے لگائے، مسجد کی چھت پر چڑھ کر میناروں کو بھی نقصان پہنچایا،ہندوتوا کے پیروکاروں  نے  مسلمانوں پر پتھراؤ کیا  اور مسجد کے قریب گھروں کو  بھی نقصان پہنچایا۔

صدر پاکستان عارف علوی نے اپنی ٹویٹ میں  اشتعال انگیز واقعے کی ویڈیو شیئر کی اور کہابھارت میں مساجد کی بے حرمتی بڑھتی جارہی ہے،اقلیتیں بالخصوص مسلمان خود کو الگ اور خوف زدہ محسوس کر رہے ہیں،بی جے پی مودی حکومت کی فاشزم بھارت کو صرف ہندوؤں کا ملک بنانے کا باعث بن رہی ہے۔


ای پیپر