آصفہ بھٹو کو والد سے ملاقات سے روکنا توہین عدالت ہے
31 اگست 2019 (16:34) 2019-08-31

اسلام آباد : چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے داخلہ سینیٹر رحمان ملک نے آصفہ بھٹو زرداری کو پمز ہسپتال میں اپنے والد سے ملنے سے روکنے پر شدید برہمی کا اظہار کیا اور چیف کمشنر اسلام آباد کو آصفہ بھٹو زرداری کیساتھ پمز میں بدتمیزی کرنے والے عملے کیخلاف انکوائری کرانے کے احکامات دیتے ہوئے کہا ہے کہ آصف علی زرداری کی بیٹی آصفہ بھٹو اور وکلاء کیساتھ بدتمیزی کرنے والے ذمہ داروں کا تعین کیا جائے

رحمان ملک نے کہا کہ  کسی بیٹی کو اپنے بیمار والد سے ہسپتال میں ملنے سے روکنا انسانی حقوق کی بدترین پامالی ہے، عدالتی اجازت نامے کے باوجود آصفہ بھٹو کو والد سے ملنے سے روکنا عدالتی احکامات کی خلاف ورزی ہے، سینیٹر رحمان ملک نے کہا عدالتی احکامات کی خلاف ورزی کرنا توہین عدالت کے زمرے میں آتا ہے،اوچھے ہتھکنڈوں سے ظاہرہو رہا ہے کہ حکومت آصف زرداری کیخلاف انتقام پراتر آئی ہے۔


ای پیپر