الیکشن 2018سے متعلق تحریک انصاف کے سنسنی خیز انکشافات
کیپشن:   Source : Yahoo
31 اگست 2018 (22:18) 2018-08-31

اسلام آباد:حکومت نے رزلٹ ٹرانسمیشن سسٹم (آرٹی ایس ) ناکامی کی تحقیقات فرانزک ماہرین سے کرانے کا مطالبہ کردیا ۔وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری اور سینیٹر اعظم خان سواتی نے کہا ہے کہ آر ٹی ایس ناکام نہیں ہوا بلکہ اسے بند کیا گیا،آرٹی ایس بند کرنے کی تحقیقات نیشنل ٹیلی کمیونی کیشن اینڈانفارمیشن ٹیکنالوجی سیکیورٹی بورڈ کے فرانزک ماہرین سے کروائی جائے تاکہ ماہرین آر ٹی ایس سسٹم کو بند کرنے والے کا پتہ چلا سکیں.

ثابت کریںگے کہ الیکشن صاف اور شفاف تھے، الیکشن سے قبل نادرا کے چیئرمین کوجس طرح بھرتی اور اس کی تعلیمی قابلیت کو بڑھایا گیا قوم کے سامنے رکھیں گے، الیکشن والے روز رات 12بجے تک الیکشن کمیشن کو آر ٹی ایس سسٹم کے بند ہونے کا پتہ نہیں تھا ، شہباز شریف کو کیسے پتہ چل گیا اس کی بھی تحقیقات ہونی چاہئیں،سابق وزیراعظم نوازشریف اور ان کے بچوں کے سفر پر اربوں روپے سرکاری خزانے سے خرچ ہوئے، نوازشریف کے بچوں کے سفر پر تقریباً اڑھائی کروڑ سرکاری خزانے سے خرچ ہوئے جس کا بل انہیں بھیج رہے ہیں، تحریک انصاف آر ٹی ایس کی ناکامی سے متعلق رپورٹ انگلش اور اردو میں شائع کرے گی ۔

جمعہ کو پریس انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ (پی آئی ڈی ) میں مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے اپوزیشن کو پیشکش کی تھی کہ دھاندلی کے الزامات پر ثبوت لائیں ہم کمیشن بنانے کو تیار ہیں کیونکہ ہم انتخابات میں شفافیت چاہتے ہیں ، شفاف انتخابات کےلئے تحریک انصاف اور عمران خان نے لڑائی لڑی ہے ، عمران خان نے کرکٹ میں نیوٹرل امپائر متعارف کروائے ۔ فواد چوہدری نے کہا کہ گزشتہ دنوں وزیراعظم عمران خان کے ہیلی کاپٹر استعمال کرنے پر شدید تنقید کی گئی جو بلاجواز ہے ،سابق وزیراعظم نوازشریف اور ان کے بچوں کے سفر پر اربوں روپے خرچ ہوئے ، نوازشریف جس بھی بیرون ملک گئے وہ لندن سے ہو کر گئے ۔

انہوں نے کہا کہ حسن ،حسین اور مریم نواز نے خلاف قانون وزیراعظم کے زیر استعمال جہاز کا استعمال کیا ، حسن ، حسین اور مریم نواز کی جانب سے جہاز کے استعمال پر ایک کروڑ 71لاکھ،48ہزار 603روپے اخراجات آئے ، اسی طرح نوازشریف کے بچوں نے وزیراعظم کے زیر استعمال ہیلی کاپٹر کا بھی بے جا استعمال کیا جس پر 62لاکھ36ہزار روپے سرکاری خزانے سے اخراجات آئے ۔ سابق وزیراعظم نوازشریف کے بچوں کے سفر پر تقریباً اڑھائی کروڑ روپے سرکاری خزانے سے خرچ ہوئے ، حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ یہ پیسے نوازشریف کے بچوں سے لئے جائیں گے جس کےلئے حسن ،حسین اور مریم نواز کو بل بھیج رہے ہیں ۔

اس موقع پر پاکستان تحریک انصاف کے سینئر رہنما اور پی ٹی آئی کی جانب سے حالیہ انتخابات میں آرٹی ایس کی ناکامی کی تحقیقات کرنے والی کمیٹی کے سربراہ سینیٹر اعظم خان سواتی نے کہا کہ ہمارا یہاں آنے کا مقصد الیکشن کمیشن کو بچانا ہرگز نہیں ہے اور نہ ہی ہم نادرا کو ملائن کرنے یہاں آئے ہیں ، اگر صاف شفاف الیکشن ہوئے ہیں تو اس کو متنازع کیوں بنایا جا رہا ہے ۔ اپوزیشن کی جانب سے رزلٹ ٹرانسمیشن سسٹم (آرٹی ایس ) کی وجہ سے متنازعہ بنایا جا رہا ہے ، الیکشن کے روز آر ٹی ایس ناکام نہیں ہوا تھا بلکہ اسے بند کیا گیا تھا ، رات 2بجے تک الیکشن کمیشن کو آرٹی ایس کے ذریعے 42ہزار 862فارم45کی تصاویر مل چکی تھیں ،85ہزار پولنگ اسٹیشن سے صرف 91شکایات الیکشن کمیشن میں درج کی گئیں ۔رزلٹ منیجمنٹ سسٹم (آر ایم ایس) کی ناکامی کی باتیں کرنا غلط ہے کیونکہ ریٹرنگ آفیسرز کی جانب سے بھیجے گئے فارم 45آرٹی ایس سسٹم کے ذریعے آر ایم ایس تک پہنچتے ہیں جب آر ٹی ایس سسٹم کو ہی بند کردیا گیا پھر آر ایم ایس کی ناکامی کی بات کرنا بلاجواز ہے،ثابت کرﺅں گا الیکشن صاف او رشفاف تھے ۔

انہوں نے کہا کہ الیکشن سے قبل نادرا کے چیئرمین کو کس طرح بھرتی کیا گیا اور اس کی تعلیمی قابلیت کو کس طرح بڑھایا گیا قوم کے سامنے رکھیں گے ، ہمارا مطالبہ ہے کہ رزلٹ ٹرانسمیشن سسٹم (آرٹی ایس ) کی نیشنل ٹیلی کمیونیکیشن اینڈانفارمیشن ٹیکنالوجی سیکیورٹی بورڈ (این ٹی آئی ایس بی ) کے فرانزک ماہرین سے تحقیقات کروائی جائیں تاکہ فرانزک ماہرین آر ٹی ایس سسٹم کو بند کرنے والے کا پتہ چلا سکیں ۔ اعظم سواتی نے کہا کہ میری تجویز ہے کہ ملک بھر سے 200سے400ریٹرنگ آفیسرز سے آرٹی ایس ڈیوائسز منگوا کر اس میں موجود فارم 45کی تصاویر جو وقت اور تاریخ کے ساتھ اس میں موجود ہیں کو الیکشن کمیشن کی ویب سائٹ پر فارم 45سے موازنہ کیا جائے جس سے دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جائیگا ۔

اعظم سواتی نے کہا کہ الیکشن والے روز رات 12بجے تک الیکشن کمیشن کو آر ٹی ایس سسٹم کے بند ہونے کا پتہ نہیں تھا ، شہباز شریف کو کیسے پتہ چل گیا اس کی بھی تحقیقات ہونی چاہیئں ۔ سینیٹ داخلہ کمیٹی میں میں نے 15سوالات اٹھائے جن کا الیکشن کمیشن اور نادرا نے الگ الگ جواب دیا ، ہماری تحقیقات کے مطابق آر ٹی ایس کی ناکامی کا ذمہ دار نادرا ہے ، الیکشن کمیشن کے چار کمشنرز کو اور چیف الیکشن کمیشن کو پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ (ن) نے مل کر تعینات کیا ۔ا لیکشن کمیشن نے ہمیشہ تحریک انصاف کے ساتھ سوتیلا سلوک کیا ۔ اعظم سواتی نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف آر ٹی ایس کی ناکامی سے متعلق رپورٹ انگلش اور اردو میں شائع کرے گی ۔


ای پیپر