آزادی مارچ والوں نے انتشار پھیلایا تو طاقت کا استعمال آخری آپشن ہو گا :وزیر اعظم
30 اکتوبر 2019 (17:12) 2019-10-30

اسلام آباد: آزادی مارچ کیلئے آنے والے شرکا ءسے نمٹنے کیلئے حکومت نے حکمت عملی مرتب کر لی ،اگر آزادی مارچ والوں نے دھرنا کیا تو مذاکرات کیے جائینگے اور اگر انتشار پھیلایا تو طاقت کا استعمال ہی آخری آپشن ہو گا ۔

تفصیلات کے مطابق آزادی مارچ کا قافلہ لاہور سے اسلام آباد کی طرف جانے کیلئے بالکل تیار ہے وہیں حکومت نے اسلام آباد میں دھرنے کی صورت میں اپنی پالیسی مرتب کر لی ،ذرائع کے مطابق اگر دھرنا دیا گیا تو مذاکرات شروع کیے جائینگے اور اگر مذاکرات کے بعد بھی بات نہ بنی تو انتشار پھیلانے والوں کیخلاف طاقت کا استعمال کیا جائیگا ۔

مولانا فضل الرحمن کے آزادی مارچ سے متعلق وزیراعظم کے زیر صدارت حکومتی مذاکراتی کمیٹی کا اجلاس ہوا، مذاکراتی کمیٹی نے وزیراعظم کو موجودہ صورتحال پر بریفنگ دی، مذاکرانی کمیٹی کو آئندہ کے لائحہ عمل پر وزیراعظم نے ہدایت بھی دیں۔

وزیر اعظم عمران خان نے پرویز خٹک کو مکمل اختیار دیتے ہوئے کہا حکومت آزادی مارچ سے سیاسی حکمت عملی سے ہی نمٹے گی لیکن اگر انتشار پھیلایا گیا تو طاقت کا استعمال آخری آپشن ہو گا ، مارچ کے شرکاءنے معاہدہ توڑا یا ریڈ زون داخل ہوئے تو سختی سے نمٹا جائے گا۔


ای پیپر