فوٹوبشکریہ فیس بک

ذہن نشین کر لیں جعلی بینک اکاونٹس کیس ایک ہفتے تک انجام کو پہنچے گا: چیف جسٹس
30 اکتوبر 2018 (11:56) 2018-10-30

اسلام آباد: سپریم کورٹ میں جعلی بینک اکاونٹس کیس کی سماعت ہوئی، چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ ذہن نشین کرلیں مقدمہ ایک ہفتے تک منطقی انجام تک پہنچے گا۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس ثاقب نثار نے جعلی بینک اکاؤنٹس کیس کی سماعت کی تو دوران سماعت ڈی جی ایف آئی اے نے سپریم کورٹ کو بتایا نیشنل بینک نے 14 ارب کی بے قاعدگیوں سے متعلق درخواست دائر کی تھی، 9 انکوائریاں شروع ہوچکی ہیں، جے آئی ٹی کو ریکارڈ ملنا شروع ہوگیا اب رپورٹ کا انتظار ہے۔

چیف جسٹس نے استفسار کیا، کیا نمر مجید عدالت آئے ہیں؟ انہیں تاحال میرے حکم پر گرفتار نہیں کیا گیا۔ چیف جسٹس نے نمرمجید کے وکیل سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ تمام بینکوں کے نقصانات آپ نے پورے کرنے ہیں۔ وکیل نے حاضری سے استثنیٰ کی درخواست دائر کرتے ہوئے معزز جج کو بتایا کہ نمر مجید بنکوں کے ساتھ معاملات طے کر رہے ہیں۔ اومنی گروپ کے پیسے بینک میں منجمد ہیں، قرضے وہاں سے ادا کرادیں، جس پر چیف جسٹس نے کہا ابھی اس بارے میں کوئی حکم جاری نہیں کریں گے۔

سپریم کورٹ نے 5 نومبر کو نمرمجید کو ذاتی حیثیت میں طلب کرلیا


ای پیپر