PDM workers, Multan, government, violence, Fazal ur Rehman
30 نومبر 2020 (15:48) 2020-11-30

ملتان : پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ کوئی رکاوٹ کام نہیں آئے گی، ہمیں کوئی مارے گا تو خاموش نہیں بیٹھیں گے۔

تفصیلات کے مطابق انہوں نے کہا کہ مجھے گرفتار کرنے سے پہلے گرفتار کرنے والوں کو گرفتار کرلیں گے، جلسہ جمہوری قدروں کے مطابق ہے۔ کنٹینر ہٹانے سے متعلق عدالتی فیصلہ حقائق کے مطابق ہے، اس وقت تک نہیں جائیں گے جب تک جلسہ نہ کرلیں۔ جو بھی حالات ہوں گے قربانی دینے کیلئے تیار ہیں، مکمل ڈیرہ ڈالیں گے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق کنٹینر ، رکاوٹیں اور پکڑ دھکڑ بھی پی ڈی ایم کو روکنے میں ناکام ہوگئی ، سیاسی جماعتوں کے کارکن بڑی تعداد میں رکاوٹیں اور بیریئر ہٹا کر قاسم باغ اسٹیڈیم میں داخل ہوگئے۔

جلسہ گاہ میں اسٹیج اور کرسیاں موجود نہیں لیکن کارکنوں کا جوش و خروش عروج پر ہے اور شدید نعرے بازی کی جا رہی ہے۔

دوسری جانب مریم نواز کے قافلے کی گاڑیاں سمندری کے مقام پر آپس میں ٹکرانے سے بال بال بچ گئیں۔ مریم نواز کی گاڑی سے آگے لیگی ایم پی اے مرزا جاوید کی گاڑی کا ٹائر پھٹ گیا۔

ذرائع کے مطابق تمام گاڑیاں اور قافلے کے افراد محفوظ ہیں، گاڑی کا ٹائر تیز رفتاری کے باعث پھٹا ، تاہم مریم نواز کا قافلہ ملتان کے لیے رواں دواں ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان کی سیاسی تاریخ میں نیا موڑ آگیا ہے، دو سابق وزرائے اعظم کی بیٹیاں پہلی بار ایک سیاسی جلسے سے خطاب کریں گی۔ نواز شریف کی بیٹی مریم نواز کے بعد بینظیر بھٹو کی بیٹی آصفہ بھٹو نے بھی سیاسی میدان میں انٹری دے دی ہے۔

نوے کی دہائی کے سیاسی حریف نواز شریف اور بے نظیر بھٹو میثاق جمہوریت پر دستخط کے بعد سیاسی حلیف بنے اور اب پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے پلیٹ فارم پر دونوں کی بیٹیاں مریم نواز اور آصفہ بھٹو نئی سیاسی تاریخ رقم کرنے جارہی ہیں۔


ای پیپر