UAE, assassination, Iranian scientist, Mohsen Fakhrizada, Israel
30 نومبر 2020 (10:39) 2020-11-30

دبئی: یو اے ای کے حکمرانوں نے ایران کے سائنس دان محسن فخری زادہ کے قتل کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اہلخانہ سے تعزیت کی۔

تفصیلات کے مطابق اماراتی وزارت خارجہ نے کہا کہ متحدہ عرب امارات کے حکمران محسن فخری زادہ کے قتل کی مذمت کرتے ہیں، اُن کا مزید کہنا تھا کہ اس قتل کے بعد ایران اور اسرائیل کے تعلقات مزید خراب ہونے کا خدشہ ہے۔

اماراتی وزیر خارجہ نے دونوں ملکوں کو تحمل کا مظاہرہ کرنے کا مشورہ بھی دیا کیونکہ اگر دونوں ملکوں میں جنگ ہوتی ہے تو اس کے اثرات پورے خطے پر پڑیں گے۔

واضح رہے کہ ایران کے صدر حسن روحانی نے محسن فخری کے قتل کا الزام اسرائیل پر عائد کیا تھا، اس کے ساتھ ہی انہوں نے اسرائیل سے اپنے سائنس دان کے قتل کا بدلہ لینا کا اعلان بھی کیا تھا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق حال ہی میں ایران کی جوہری تنصیبات پر بھی حملے ہوئے جس میں اسرائیل کے ملوث ہونے کے انکشافات ہوئے تھے۔

خیال رہے کہ اسرائیل اور سعودی عرب ایران کے جوہری پروگرام سے خوفزدہ ہیں۔ اس لیے انہوں نے امریکا کے ساتھ مل کر عالمی طاقتوں سے مطالبہ کیا تھا کہ وہ ایران پر جوہری ہتھیاروں کے حوالے سے پابندی لگائے۔

لیکن اس معاملے پر ایران کو چین اور روس کی مکمل حمایت حاصل ہے۔ امریکا کی پابندیوں کے باوجود چین اور روس ایران کے ساتھ تجارتی اور عسکری معاہدے کر رہے ہیں۔

یاد رہے کہ امریکا اور اسرائیل مشرق وسطیٰ پر حکمرانی چاہتا ہے لیکن ایران اُن کی بھر پور مخالفت کر رہا ہے اس لیے ایران کو راستے سے ہٹانے کے لیے اسرائیل اور امریکا خفیہ کارروائیوں میں مصروف ہیں۔ راوں ماہ امریکا کے نامور اخبار نے دعوی کیا تھا کہ ٹرمپ نے ایران پر حملہ کرنے کیلئے مشیروں سے رائے مانگی تھی لیکن قریبی دوستو نے امریکی صدر کو ایسا کرنے سے روک دیا۔


ای پیپر