آرمی چیف حکومت اور جمہوریت کے ساتھ کھڑے ہیں: شیخ رشید
30 نومبر 2019 (18:11) 2019-11-30

لاہور: وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ جنرل قمر جاوید باجوہ کو ملنے والے چھ ماہ کا مطلب تین سال ہی سمجھا جائے، ان کو نئے3 سال مل چکے اور ہمارے بھی3سال ہیں۔

لاہور میں پر یس کانفر نس سے خطاب کے دوران وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے کہا کہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت ملازمت میں توسیع ملک میں ہیجان پیداکرنے کی کوشش کی گئی۔بھارتی میڈیا نے جس طرح فضل الرحمان کے دھرنے کو کوریج دی اسی طرح ایک سپہ سالار کے معاملے کو بھی کوور کیاکرتارپور راہداری بنا کر جنرل باجوہ نے بھارت کو ایسا زخم دیا ہے کہ جو اسے ہمیشہ یاد رکھاجائے گا۔افغان سرحد پر باڑ لگاکردشمن کے سینوں پر مونگ دلی ہے۔سادہ اکثریت سے آرمی چیف کی توسیع ہوجائے گی۔

انہوں نے کہا کہ آرمی چیف حکومت اور جمہوریت کے ساتھ کھڑے ہیں۔چھ ماہ بہت زیادہ ہیں چھ ہفتوں میں ہی آرمی چیف کو توسیع دے دی جائے گی،تمام جماعتیں آرمی چیف کو تین سال تک توسیع دینے پر متفق ہیں۔چھ مہینے کو تین سال سمجھیں۔جنرل باجوہ کو بھی تین سال مل گئے ہمارے پاس بھی تین سال ہیں۔آئین میں ترمیم کی ضرورت نہیں ہے امید ہے سادہ اکثریت سے ہی مسئلہ حل ہوجائے گاعمران خان کسی صورت این آر او نہیں دیا جائے گا۔فضل الرحمان کو کھلی چھوٹ دے دی ہے،اسے لگا رہنے دیں پورے ملک میں جمعہ جمعہ کھیل رہاہے۔

شیخ رشید نے کہا کہ سادہ اکثریت سے آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع ہو جائے گی کیوں کہ تمام جماعتیں اس کے لیے متفق ہیں اور سادہ اکثریت سے نہ ہوئی تو پارلیمنٹ سے توسیع ہو جائے گی‘ اپوزیشن کی صورتحال نارمل ہے اور ان کے پاس کچھ کہنے کو نہیں، ایک مافیا ہے جو عمران خان کی حکومت کو غیر مستحکم کرنا چاہتا ہے اور ملک میں ہیجان برپا کرنے کی ناکام کوشش کی جا چکی ہے‘آرمی چیف جمہوریت کی کامیابی کیلئے حکومت کے ساتھ ہیں‘ سندھ سے چیخوں کی آواز سن رہاہوں لیکن یاد رکھیں عمران خان کسی صورت این آر او نہیں دیں گے‘ مارچ2020 تک سابق صدرآصف زرداری کے پلی بارگین کے معاملات طے پا جائیں گے‘پنجاب میں مہنگائی اور امن و امان کا مسئلہ ہے‘ عثمان بزدار اب سیکھ گئے ہیں، ٹھیک ہو جائیں گے۔


ای پیپر