پاکستان میں میرے خلاف باتیں ۔۔۔ملالہ بھی میدان میں آگئیں
30 مارچ 2018 (22:57) 2018-03-30

اسلام آباد: امن کا نوبل انعام یافتہ ملالہ یوسفزئی نے کہا ہے کہ پاکستان اتنا ہی میر املک ہے جتنا کسی دوسرے کا ہے پاکستان میں مستقل قیام کر کے تعلیم پر توجہ دوں گی مجھ پربے بنیاد الزامات درست نہیں شکوہ منہ پر کریں.

فاٹا کو     خیبر پخو نخوا کا حصہ بنایا جائے تاکہ وہاں کی عوام کو برابری کے حقوق حاصل ہو سکیں ۔ پاک بھارت قیام سے اب تک کشمیریوں  نے امن نہیں دیکھا دونوں ممالک کو مذاکرات کرنے چا ہیں بہادری کا دوسرا نام عاصمہ جہانگیر ہے نجی ٹی وی کو انٹر ویو دیتے ہوئے نوبل انعام یافتہ ملالہ یوسف زئی نے کہا ہے کہ پاکستان واپس آنے پر بہت خوش ہوں اوربار بار اپنے آپ کو یاد دلوا رہی ہو ں کہ میں پاکستانی ہوں نقشے    میں دیکھتی تھی کہ پاکستان میرا ملک ہے اور سوچھتی تھی کہ ایک دن اپنے ملک واپس جائوں گی ہم کوشش کریں گے کہ پاکستان کی ہر بچی کو تعلیم ملے اور وہ اپنا خواب پور اکر سکے۔


ای پیپر