لاہور ،لیڈ ی ہیلتھ ورکرز نے مطالبات منظور نہ ہونے پر اہم اعلان کر دیا
30 مارچ 2018 (17:18) 2018-03-30

لاہور : پنجاب اسمبلی کے سامنے لیڈی ہیلتھ ورکرز کا اپنے مطالبات کے حق مےں پانچوےں روز بھی احتجاجی دھر نہ ‘مظاہرین نے دھرنے کا رخ چیئرنگ کراس سے وزیراعلی ہاس اور میٹرو بس کی جانب کرنےکی دھمکی دیدی ‘ لاہور ہائیکورٹ نے سیکرٹری داخلہ کو مال روڈ پر لیڈیز ہیلتھ ورکرز کا دھرنا ختم کروا کر عمل درآمد رپورٹ 2 اپریل کو عدالت میں پیش کرنے کا حکم دے دیاجبکہ محکمہ صحت نے لےڈی ورکرز کو دھر نے سے دور رہنے کےلئے اےس اےم اےس کے ذرےعے سنگےن نتائج کی دھمکےاں دےنا بھی شروع کر دےں ۔ تفصےلات کے مطابق تفصیلات کے مطابق مال روڈ پر لیڈی ہیلتھ ورکز کا احتجاج پانچویں روز بھی جاری رہا ہے دھرنے کے باعث مال روڈ پر ٹریفک کی روانی بدستور متاثر ہے، گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگی ہوئی ہے جس کی وجہ سے شہریوں کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑ ادھرنے میں شریک خواتین کبھی حکمرانوں کے خلاف شدید نعرے بازی کرتی ہیں تو کبھی ہاتھ اٹھا کر مطالبات کی منظوری کے لیے دعائیں کرتی نظر آتی ہیںلیڈی ہیلتھ ورکرز کا مطالبہ ہے کہ انہیں سروس اسٹرکچر دیا جائے، اسکیل تجربے کی بنیاد پر اپ گریڈ کیا جائے ڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف، سی سی پی او امین وینس اور صوبائی وزیر قانون رانا ثنااللہ نے لیڈی ہیلتھ ورکرز کو منانے کی کوشش کی لیکن ناکام رہے لیڈی ہیلتھ ورکرز کا کہنا تھا کہ اعلی حکام نے غلط بیانی کی ہے، اب مذاکرات کے لئے نہیں آئیں گی جب تک سروس سٹرکچر ہاتھ میں نہیں دیا جاتا دھرنا جاری رہے گا دھرنے میں شریک خواتین کا کہنا تھا کہ محکمہ صحت کی جانب سے چیئرنگ کراس دھرنے میں شریک خواتین کو وارننگ میسجز کیے جا رہے ہیں، جس میں کہا جا رہا ہے کہ لیڈی ہیلتھ ورکرزاحتجاج کا حصہ نہ بنیں ،دھرنےمیں شرکت پرلیڈی ہیلتھ ورکرزنتائج کی ذمہ دارخود ہوں گی جبکہ دوسر ی طرف سماجی کارکن عبد اللہ ملک نے مال روڈ پر لیڈیز ہیلتھ ورکرز کا احتجاج ختم کروانے کیلئے لاہور ہائیکورٹ سے رجوع کر لیا جسٹس امین الدین خان کی سربراہی میں 3 رکنی فل بنچ نے درخواست پر سماعت کی۔ درخواستگزار نے موقف اختیار کیا کہ مال روڈ پر لیڈیز ہیلتھ ورکرز کے احتجاج کو 5 روز گزر گئے، احتجاج سے شہریوں کے معمولات زندگی مفلوج ہو کر رہ گئے ہیں۔ عدالت پنجاب حکومت کو لیڈیز ہیلتھ ورکرز کے مطالبات منظور کرنے کا حکم دے عدالت نے ریمارکس دیئے کہ مال روڈ پر دھرنے ختم کروانے سے متعلق حکومت نے اب تک قانون سازی کیوں نہیں کی، عدالت کے حکم کی روشنی میں دھرنا ختم کروایا جائے۔


ای پیپر