وفاقی کابینہ نے جیل ریفارمز کی منظوری دے دی
30 جولائی 2019 (20:44) 2019-07-30

اسلام آباد: وفاقی کابینہ نے جیل ریفارمز اور کئی اداروں کے سربراہوں کی تقرری کی منظوری دے دی۔

وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا، جس میں پاک فوج کے شہدا کےلئے فاتحہ خوانی بھی کی گئی۔اجلاس کے 9 نکاتی ایجنڈے میں انٹرٹیمننٹ اور تحائف فنڈ بحال کرنے سمیت دیگر معاملات زیر غور آئے۔

ذرائع کے مطابق ایوان صدر نے تحائف اور انٹرٹینمنٹ فنڈ کی بحالی کےلئے درخواست کی تھی، اجلاس میں قومی کمیشن برائے حقوق اطفال کے قیام پر بھی غور کیا گیا۔کا بینہ اجلاس پر بریفنگ دیتے ہوئے معاون برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے بتایا کہ کابینہ نے جیل ریفارمز کی منطوری دے دی ہے۔

انہوں نے مزید کہاکہ قیدیوں کی حالت زار بہتر بنانے کےلئے خصوصی کمیٹی تشکیل دے کر جیلوں میں اصلاحات کا ایجنڈا کمیٹی کے سپرد کیا گیا ہے۔

فردوس عاشق اعوان نے یہ بھی کہا کہ اصلاحات کےلئے تمام جیلوں کا ڈیٹا اکٹھا کیا جارہا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ وفاقی کابینہ نے کئی اداروں کے سربراہوں کی تقرری کی منظوری بھی دی ہے۔معاون برائے اطلاعات نے کہا کہ کابینہ نے سالہا سال سے زیر التوا مقدمات کی سماعت کے چیف جسٹس آف پاکستان کے اقدام کو سراہا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ کابینہ نے دادو سندھ میں سیپکو اہلکار سرفراز کے ساتھ زیادتی کا نوٹس لیا ہے۔

فردوس عاشق اعوان نے یہ بھی کہا کہ کابینہ نے کراچی اور حیدرآباد میں بارشوں سے تباہی کی صورتحال پر بھی غور کیا اور گہری تشویش کا اظہار کیا۔انہوں نے کہا کہ کراچی اور حیدرآباد میں بارشوں سے گڈگورننس کادعوی کرنے والے بے نقاب ہوگئے ۔


ای پیپر