PPP, constitutional amendment, Senate open voting, PTI government, PM Imran Khan
30 جنوری 2021 (15:50) 2021-01-30

اسلام آباد: پاکستان پیپلزپارٹی کا سینیٹ اوپن ووٹنگ سے متعلق آئینی ترمیم کی مخالفت کا فیصلہ۔

سینیٹر شیری رحمان نے کہا کہ حکومت کا ترمیمی بل جلد بازی اور بدنیتی اور تحریک انصاف کے ذاتی مفاد پر مشتمل ہے ، انتخابی اصلاحات ایک بل اور ایک ترمیم سے نہیں ہوتے۔

انہوں نے کہا کہ ایم پی ایز کے ریٹ کسی اور نے نہیں وزیراعظم نے خود لگائے ، سینیٹ انتخابات آئین اور قانون کے مطابق ہونگے ، وزیراعظم کی خواہش کے مطابق نہیں۔

ادھر شازیہ مری کا کہنا ہے ، قوم کو سلیکٹڈ اور سفاک حکومت کے خلاف میدان میں آنا پڑے گا ۔

دوسری جانب ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا نے کہا کہ نیب نے میرے خلاف جتنے کیس بنانے ہیں بنائیں مجھے پروا نہیں ، سینیٹ الیکشن سے متعلق ترمیمی بل سے متعلق ڈپٹی چیئرمین سینیٹ نے کہا، وقت کم رہ گیا ہے، حکومت اپوزیشن کے ساتھ مل کر ترمیمی بل پیش کرے۔

انہوں نے چیئرمین نیب کو وارننگ دیتے ہوئے کہا کہ نیب تاجروں کے معاملات میں مداخلت کرنا بند کر دے، ورنہ پرائیویٹ سیکٹر کے لوگ ٹریڈنگ اکاؤنٹ بند کر دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ نیب کا رویہ تبدیل نہ ہوا تو معیشت ایک بار پھر بحران کا شکار ہوسکتی ہے۔


ای پیپر