نیب ترمیمی آرڈیننس 2019 باضابطہ طور پر نافذ کر دیا گیا
30 دسمبر 2019 (19:40) 2019-12-30

اسلام آباد:قومی احتساب بیورو ( نیب ) ترمیمی آرڈیننس 2019 باضابطہ طور پر نافذ کر دیا گیا ۔وفاقی حکومت نے آرڈیننس کا گزٹ نوٹیفکیشن جاری کر دیا۔

نوٹیفکیشن کے مطابق ٹیکس، لیوی سے متعلقہ ایشوز نیب کے دائرہ اختیار سے باہر ہونگے ، احتساب عدالتوں سے ٹیکسز کے تمام مقدمات متعلقہ عدالتوں کو منتقل ہو جائیں گئے،بدانتظامی پر عوامی عہدہ رکھنے والوں کیخلاف نیب کارروائی نہیں کر سکے گا،عوامی عہدہ رکھنے والوں کیخلاف کارروائی صرف مالی فوائد اٹھانے کے شواہد پر ہوگی۔پیر کونیب ترمیمی آرڈیننس 2019 باضابطہ طور پر نافذ کر دیا گیا ۔

وفاقی حکومت نے آرڈیننس کا گزٹ نوٹیفکیشن جاری کر دیا ۔ نوٹیفکیشن کے مطابق سینیٹ اور اسمبلی کے اجلاس اس وقت نہیں ہو رہے ،صدر مملکت حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے فوری اقدامات پر مطمئن ہیں، ٹیکس، لیوی سے متعلقہ ایشوز نیب کے دائرہ اختیار سے باہر ہونگے ۔ٹیکسز اور لیوی سے متعلقہ تمام انکوائریز متعلقہ فورمز کو منتقل ہو جائیں گی۔ نوٹیفکیشن کے مطابق احتساب عدالتوں سے ٹیکسز کے تمام مقدمات متعلقہ عدالتوں کو منتقل ہو جائیں گئے،بدانتظامی پر عوامی عہدہ رکھنے والوں کیخلاف نیب کارروائی نہیں کر سکے گا۔

نوٹیفکیشن کے مطابق عوامی عہدہ رکھنے والوں کیخلاف کارروائی صرف مالی فوائد اٹھانے کے شواہد پر ہوگی،مالی فائدہ اٹھانے تک اختیارات کے ناجائز استعمال کا کیس بھی نہیں بن سکے گا۔مالی فائدہ اٹھانے کے شواہد نہ ہوں تو سرکاری افسران کیخلاف کسی فیصلے پر کیس نہیں بنے گا۔


ای پیپر