فالس فلیگ آپریشن کب ہو گا ؟شاہ محمودقریشی نے بڑے خطرے سے آگاہ کر دیا
30 دسمبر 2019 (18:04) 2019-12-30

اسلام آباد:وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ مودی سرکار کی ہندوتوا پالیسی پر مبنی اقدامات کے خلاف پورا ہندوستان سراپا احتجاج ہے ،بھارتی سرکار کے متعصبانہ اقدامات کے خلاف پر امن احتجاج کرنے والے مظاہرین کو بدترین پولیس تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے ،ہمیں خدشہ ہے بھارتی سرکار انسانی حقوق کی ان خلاف ورزیوں سے توجہ ہٹانے کیلئے ،کوئی فالس فلیگ آپریشن کر سکتی ہے۔

پیر کو وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کی زیر صدارت مشاورتی کونسل برائے امور خارجہ کا گیارہواں اجلاس وزارت خارجہ میں منعقد ہوا جس میں سیکرٹری خارجہ سہیل محمود، سابقہ خارجہ سیکرٹریز، سفراء، ماہرین بین الاقوامی تعلقات سمیت وزارت خارجہ کے سینیئر حکام نے شرکت کی۔دوران اجلاس ہندوستان میں جاری احتجاج،مقبوضہ جموں کشمیر میں جاری مسلسل کرفیو، لائن آف کنٹرول کی صورتحال سمیت اہم خارجہ امور پر تبادلہ خیال کیاگیا۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہاکہ مودی سرکار کی ہندوتوا پالیسی پر مبنی اقدامات کے خلاف پورا ہندوستان سراپا احتجاج ہے ۔

انہوںنے کہاکہ بھارتی سرکار کے متعصبانہ اقدامات کے خلاف پر امن احتجاج کرنے والے مظاہرین کو بدترین پولیس تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ پولیس مسلم اکثریتی علاقوں میں گھروں میں گھس کر مکینوں کو بدترین تشدد کا نشانہ بنا رہی ہے۔ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہاکہ بی جے پی کی حکومت اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کا استحصال کر رہی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ ہمیں خدشہ ہے کہ بھارتی سرکار انسانی حقوق کی ان خلاف ورزیوں سے توجہ ہٹانے کیلئے ،کوئی فالس فلیگ آپریشن کر سکتی ہے ۔

وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے شرکاءکو صدر سیکورٹی کونسل کو لکھے گئے حالیہ خط کی تفصیلات سے آگاہ کیا۔مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا کہ مقبوضہ جموں و کشمیر کے لاکھوں معصوم انسان 5 آگست سے بدترین کرفیو کا سامنا کر رہے ہیں۔اجلاس میں ہندوستان میں مسلمانوں کے خلاف بنائے گئے امتیازی قوانین اور مقبوضہ جموں و کشمیر کی صورتحال کو عالمی سطح پر موثر انداز میں اجاگر کرنے کے حوالے سے خصوصی مشاورت کی گئی۔اجلاس میں مقبوضہ جموں و کشمیر کے نہتے معصوم انسانوں کو بھارتی استبداد سے نجات دلانے کے لیے بین الاقوامی برادری کے ساتھ سفارتی روابط کو مزید فروغ دینے پر بھی اتفاق کیا گیا۔


ای پیپر