بھارت میں اقلیتوں کے حقوق روندنا بیماری ذہنیت کی علامت ہے :شبلی فراز
30 اپریل 2020 (16:49) 2020-04-30

اسلام آباد:وفاقی وزیر اطلاعات سینیٹر شبلی فراز نے کہا ہے کہ عالمی مذہبی آزادیوں کے امریکی کمیشن کی رپورٹ نے بھارت کے جمہوری اور سیکولر چہرے کو پوری دنیا کے سامنے بے نقاب کر دیا ہے۔

ٹوئٹر پر اپنے بیان میں سینیٹر شبلی فراز نے کہاکہ یہ رپورٹ انتہا پسند ہندو معاشرے کا پتہ دے رہی ہے،نریندر مودی کے ہاتھوں آج بھارتی سماج تقسیم کی گہری کھائی میں گر چکا ہے۔انہوں نے کہاکہ عالمی تنظیمیں اور بین الاقوامی میڈیا بھارت کی اصلیت دکھا رہاہے،دنیا بھر میں بھارتی اقدام کی اتنی مذمت پہلے کبھی نہیں دیکھی جتنی آج دیکھی جا رہی ہے۔

انہوںنے کہاکہ بھارت میں اقلیتوں کے حقوق روندے جارہے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ بھارت میں ہندتوا سوچ کا راج اور اکیسویں صدی کی نازی تنظیم ابھر کر سامنے آ رہی ہے۔انہوںنے کہاکہ مسلمانوں کے گرد گھیرا ہر روز مزید تنگ ہورہا ہے۔ انہوںنے کہاکہ ایک طرف جموں و کشمیر میں انہیں کرفیو کے جبر کا سامنا ہے تو دوسری جانب متنازعہ شہریت بل کے ذریعے ان کی زندگی اجیرن بنائی جا رہی ہے۔ انہوںنے کہاکہ کرونا کو مسلم وائرس قرار دینا بیمار بھارتی ذہنیت کی عکاسی ہے۔


ای پیپر