JUI,PDM multan jalsa,reminiscent,dictatorship era
29 نومبر 2020 (20:06) 2020-11-29

لاہور : جے یو آئی کے مر کزی رہنمائوں کا کہنا ہے کہ ملتان میں انتظامیہ کی طرف سے سیاسی کارکنوں کی گرفتاریوں اور چھاپوں سے آمریت کے دور کی یاد تازہ ہو گئی ہے۔

 مولانا محمد امجد خان ،محمد اسلم غوری ،ڈاکٹر عتیق الرحمن نے اپنے مشترکہ بیان میں کہاکہ پی ڈی ایم کے جلسے کے کامیاب ہونے کا سب سے بڑا ثبوت یہ ہے کہ ملتان میں جلسے سے حکومت نے خوفزدہ ہو کر چھاپے مارنے شروع کر دئیے ہیں۔ سلیکٹڈ حکومت کوشش کر رہی ہے کہ آئینی اور جمہوری لوگ اپنا بنیا دی حق بھی استعمال نہ کر سکیں لیکن ملتان میں کل عوام حکومتی کی پالیسیوں کیخلاف قاسم باغ پہنچ کر اس سلیکٹڈ حکومت کو ہی مسترد کر دیگی۔

انہوں نے کہا کہ ملتان میں کل پی ڈی ایم کا  جلسہ ہر حال میں ہوگا اور اس حکومت کو گھر جانا ہی پڑے گا ۔ ان کے بوکھلانے کی وجہ صرف یہ ہے کہ انہیں اپنا تاریک مستقبل نظر آگیا ہے اس لئے یہ اب اوچھے ہتھکنڈے استعمال کر رہے ہیں۔ہمارے رہنمائوں کی گرفتاریوں سے عوام کے جوش و خروش میں کمی نہیں بلکہ اضافہ ہو گا اور ہم سب کے حوصلے اس طرح کے اوچھے ہتھکنڈوں کے بعد مزید بڑھ گئے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ جے یو آئی کے کارکن پی ڈی ایم کے ملتان میں  جلسہ کو کامیاب بنانے کیلئے تمام صلاحیتیں صرف کر دیں گے ۔ اب عوام ان جعلی حکمرانوں کو مزید برداشت نہیں کرے گی۔ جیلوں اور قید و بند کی صعوبتیں ہمارا راستہ نہیں روک سکتیں۔ ہم اس جلسے میں عالمی وبا کی ایس او پیز پر مکمل عمل کرتے ہوئے شرکت کریں گے کیونکہ یہ ملتان کی عوام کی طرف سے اس حکومت کیخلاف ایک ریفرنڈم ہے۔


ای پیپر