ہزارہ موٹروے عظیم الشان منصوبہ
29 نومبر 2019 2019-11-29

کسی ملک کی ترقی کا دارومدار ان کے انفراسٹرکچر یعنی تعمیراتی ڈھانچے پر ہوتا ہے اور پوری دنیا میں سڑکوں کو اس کا بنیادی ڈھانچہ تصور کیا جاتا ہے جو کسانوں کو منڈیوں سے جوڑتا ہے جو تاجروں کو بازاروں سے جوڑتا ہے اور جو شہروں کو قصبوں سے جوڑتا ہے اور ترقی کا پہیہ چلتا رہتا ہے کیونکہ کارخانو ں کا مال دیہاتوں تک پہنچ جاتا ہے ۔اگر سڑکیں اور انفراسٹرکچر خراب ہو تو نا صرف صنعتوں کو مشکلات کا سامنا ہوتا ہے بلکہ ملک کی ترقی کا پہیہ بھی رک جاتا ہے ۔اس حوالے سے سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ(ن)کے قائد محمد نواز شریف جو ایک صنعتکارفیملی سے تعلق رکھتے ہیں نے پاکستان کو جوڑنے کیلئے ایشیاء میں پہلا موٹروے بنایا اور پاکستان کو نا صرف آپس میں جوڑ دیا بلکہ پاکستان کے دفاع کو بھی اس موٹروے کے ذریعے نا قابل تسخیر بنایا اور موٹرویز پاکستانی ایئر فورس کے لئے مشکل وقت میں رن وے کا کام آئے گا ۔یہی وجہ ہے کہ پاکستان کے ایئر فورس کے پائلٹس دنیا کے وہ پہلے پائلٹس ہیں جنہوں نے موٹروے پر طیاروں کی اڑان بھری اور یہ نظارہ پوری دنیا نے دیکھا کہ بغیر کسی ریڈار اور ٹیلی کمیونی کیشن سسٹم کے پاکستانی ایئر فورس کے قابل فخر جوانوں نے کئی بار موٹرویز پر اڑان بھر کر اور دوبارہ بغیر کسی حادثے اور بغیر کسی مشکل سے جیٹ طیاروں کو موٹروے پر اتار دیا جو نا صرف پاکستان کے لئے خوش بختی کی علامت ہے بلکہ موٹروے پاکستان کے دفاع کے لئے بھی ایک موثر ہتھیار بن گیا ہے ۔

ملک میں موٹرویز کا جال بچھانے کا آغاز سابقہ وزیراعظم محمد نواز شریف نے پہلی مرتبہ حکومت میں آنے کے بعد کیا تھا اور جب نواز شریف ملک کے تیسرے مرتبہ وزیراعظم منتخب ہوگئے اپنے پانچ سالہ دور حکومت میں 1750کلو میٹر موٹرویز تعمیر کر کے پورے ملک کو موٹرویز کے ذریعے جوڑ دیا ۔ملک کو ترقی اور خوشحالی کی راہ پر گامزن کر دیا کیونکہ پانچ سال میں سابقہ وزیراعظم محمد نواز شریف نے کراچی سے لیکر ہزارہ تک موٹرویز کو مقررہ مدت میں مکمل کر کے اربوں روپے کی بچت بھی کی۔ محمد نواز شریف نے ملک میں موٹرویز کی بنیاد رکھی اور موٹرویز کا سیمبل بن گئے۔ نواز شریف ہی موٹرویز کے بانی ہیں۔ ہزارہ موٹروے بھی عوام کا دیرینہ مطالبہ تھا اور 2013ء کے الیکشن میں مسلم لیگ (ن)نے اپنے منشور میں عوام سے وعدہ کیا تھا کہ مسلم لیگ (ن)کی حکومت کے برسر اقتدار آنے کے بعد ہزارہ موٹروے تعمیر کی جائے گی اور عوام کا دیر ینہ مطالبہ پورا کر دیا گیا۔جب تحریک انصاف کی طرف سے اسلام آباد میں دھرنا دیاگیا تو اس وقت کے ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی مرتضیٰ جاوید عباسی نے محمد نواز شریف کو حویلیاں میں جلسہ کرنے کی دعوت دی ۔ ہزارہ کی تاریخ میں بہت بڑا جلسہ تھا اور جلسے کے میزبان مرتضیٰ جاوید عباسی تھے اور انہوں نے محمد نواز شریف کے سامنے سپاسنامہ پیش کیا اور ہزارہ ایکسپریس وے کو سی پیک میں شامل کرنے کا مطالبہ کیا ۔محمد نواز شریف نے اپنے خطاب میں ہزارہ ایکسپریس وے کا نام ہزارہ موٹروے رکھنے اور سی پیک میں شامل کرنے کا اعلان کیا اور کہا کہ ہزارہ موٹروے کا منصوبہ برہان سے تھاکوٹ ،بٹ گرام تک 160کلو میٹر تعمیر کیا جائے گا اور سی پیک کے تحت صرف موٹروے بنانا نہیں بلکہ ہزارہ میں حویلیاں کے مقام پر ڈرائی پورٹ اور انڈسٹریل زون بنے گا ۔ ہزارہ سے بیروزگاری کا خاتمہ ہو جائے گا ۔ ہزارہ موٹروے گروپ سی پیک کا حصہ بنانے میں اہم کردار مرتضیٰ جاوید عباسی نے اد اکیا اور ہزارہ موٹروے کی بروقت تکمیل میں بھی مرتضیٰ جاوید عباسی جب ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی تھے این ایچ اے حکام کے ساتھ میٹنگ کرتے تھے اور حسن ابدال سے شاہ مقصود تک ہزارہ موٹروے کی تعمیر میں مرتضیٰ جاوید عباسی کی کاوشیں قابل تحسین ہیں ۔حسن ابدال سے شاہ مقصود تک موٹروے کا افتتاح سابقہ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کیا تھا ۔تحریک انصاف حکومت کے برسر اقتدار آنے کے بعد سی پیک پر کام سست روی کا شکار ہوگیا ۔ ہزارہ موٹروے مانسہر ہ تک تکمیل بھی 14ماہ کی تاخیر ہو گئی اور وزیراعظم عمران خان نے شاہ مقصود سے مانسہرہ تک ہزارہ موٹروے کا افتتاح کیا ۔وزیراعظم عمران خان ملک میں موٹرویز کی تعمیر کی ہمیشہ مخالفت کرتے تھے لیکن محمد نواز شریف نے جس موٹروے کا سنگ بنیاد رکھا تھا اسی موٹروے کا افتتاح کر دیا ۔مسلم لیگ(ن) ہزارہ ڈویژن کے قائدین سابقہ وفاقی وزیر اور موجودہ ایم پی اے سردار یوسف ،سردار اورنگزیب نلوٹھہ ایم پی اے ،سابقہ ایم این اے بابر نواز ،مرتضیٰ جاوید عباسی ایم این اے کے بھائی ذوالفقار جاوید عباسی کی قیادت میں ایبٹ آباد سے بڑی ریلی نکالی گئی ۔ریلی شاہ مقصود انٹر چینج پر ختم ہوئی ۔مقررین نے خطاب میں کہا کہ ہزارہ موٹروے کا افتتاح سابقہ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کیا تھا ۔دوبارہ افتتاح سلیکٹیڈوزیراعظم عمران خان نے کیا اور وہ کہتے تھے کہ قومیں موٹروے سے نہیں بنتی اور اب انہی منصوبوں کا دوبارہ افتتاح کر کے سیاسی فائدہ اٹھا رہے ہیں ۔ ہزارہ موٹروے کا تحفہ مسلم لیگ(ن)کی حکومت نے دیا ہے ۔ ہزارہ کے عوام کے احساس محرومیوں کا خاتمہ مسلم لیگ(ن)نے کیا ہے ۔واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے ایبٹ آباد دورے کے موقع پر ہزارہ ڈویژن کے لئے کسی میگا پراجیکٹ کا اعلان نہیں کیا جس کی وجہ سے عوام میں شدید مایوسی پھیل گئی ہے ۔


ای پیپر