ارطغرل: ترک ڈرامے کے مرکزی کردار حقیقت میں کون ہیں؟
29 May 2020 (16:53) 2020-05-29

میگزین رپورٹ

ترک ڈرامہ ارطغرل اردو زبان میں پاکستان میں نشر ہو رہا ہے اور اس کے کردار سوشل میڈیا پر ہی نہیں بلکہ لوگوں کی گفتگو میں بھی بات چیت کا موضوع بنے ہوئے ہیں۔ ملک میں ’ ارطغرل غازی‘ کی پہلی قسط یوٹیوب پر دو کروڑ لوگ دیکھ چکے ہیں۔اگر آپ بھی کئی پاکستانیوں کی طرح آج کل اس ترک ڈرامے کے مداح ہیں تو ارطغرل کے ساتھ ساتھ حلیمے سلطان، تورگت اور سیلجان کے کرداروں سے بھی بخوبی واقف ہوں گے۔ تو آئیں آج آپ کو ان میں سے چند مرکزی کرداروں کو نبھانے والے اداکاروں سے ملواتے ہیں۔

ارطغرل غازی: اینگن التن دزیتن

اینگن التن دزیتن ’دریلس ارطغرل ‘ میں ارطغرل کا مرکزی کردار ادا کر رہے ہیں۔ ان کی پیدائش 1979ء میں ترکی کے خطے ازمیر میں ہوئی تھی۔ سکول کے دنوں سے ہی انھیں اداکاری کا شوق تھا اور پھر انھوں نے 2001ء میں ازمیر کی دوکز ایلول یونیورسٹی سے ڈرامے کے شعبے میں ڈگری حاصل کی۔ اس کے بعد 2001ء میں ہی وہ کام کی تلاش میں استنبول آگئے۔ ترک ٹی وی کے لیے ان کا پہلا رول ڈرامہ سیریل ’روح سر‘ میں تھا جس کے بعد انھوں نے ’کوچم بنم‘ اور ’یدیپے استنبول‘ سمیت کئی ٹی وی ڈراموں میں کام کیا۔ 2005ء میں انھوں نے فلموں میں کام کرنا شروع کیا، جن میں ہدایتکار مصطفی التوکلیار کی فلم ’بیزانن کدنلری‘ شامل تھی۔انھوں نے کئی فلموں اور ڈراموں میں کام کیا ہے۔ ٹی وی ڈراموں کے علاوہ وہ تھیٹر میں بھی کام کر چکے ہیں اور دیارباکر نیشنل تھیٹر میں پیش کیے جانے والے ڈرامے ’در ایاکبی الے‘ کے ہدایت کار بھی تھے۔ لیکن یہ کہنا بالکل غلط نہیں ہوگا کہ ارطغرل ہی ان کا سب سے زیادہ مقبول کردار ہے۔2014ء میں دیے گئے ایک انٹرویو میں ان کا کہنا تھا کہ ویسے تو انھیں ارطغرل کی کہانی بہت پسند آئی تھی لیکن ان کے ذہن میں اس شو کے بارے میں کئی خدشات تھے کیونکہ ’تاریخ پر مبنی کہانیاں اگر حقیقت کے قریب نہ ہوں تو ان کے مضحکہ خیز بن جانے کا خطرہ ہوتا ہے۔‘ ارطغرل کے بعد اب وہ ڈرامہ سیریل ’جنایت‘ میں مرکزی کردار ادا کر رہے ہیں۔ 2014ء میں انھوں نے نسلشاہ الکوچلر سے شادی کی اور ان کا ایک بیٹا بھی ہے۔

حلیمے سلطان: اسرا بِلگِچ

ارطغرل کی محبوبہ اور پھر بیوی کا کردار ادا کرنے والی اسرا بِلگِچ کی پیدائش 1992ء میں انقرہ میں ہوئی۔ انھوں نے پہلے ہیجتیپ یونیورسٹی سے آثار قدیمہ میں ڈگری حاصل کی۔ پھر انھوں نے انقرہ کی بلکینت یونیورسٹی سے بین الاقوامی امور میں ڈگری حاصل کی اور اب قانون کی تعلیم حاصل کر رہی ہیں۔ دیریلس ارطغرل میں حلیمے سلطان کا کردار ان کا پہلا رول تھا اور اس کی وجہ سے انہیں کافی مقبولیت ملی۔ انہوں نے 2018 میں ارطغرل میں کام کرنا چھوڑ دیا تھا جس کے بعد انھوں نے ایک فلم حاصل کر لی تھی۔ آج کل وہ ’رامو‘ نامی کرائم ڈرامے میں مرکزی کردار ادا کر رہی ہیں۔ حلیمے سلطان کے کردار کو انھوں نے ایک مشکل رول اور ایک زبردست موقع قرار دیا تھا۔ اسرا بلگچ نے 2017ء میں ترکی کی قومی فٹ بال ٹیم میں کھیلنے والے فٹ بالر گوکھان تورے سے شادی کر لی تھی تاہم دو سال بعد 2019ء میں دونوں کا رشتہ ختم ہو گیا تھا۔

تورگت: جنگیز جاشکن

ڈرامے میں ارطغرل کے سب سے قریبی ساتھی تورگت الپ کا کردار نبھانے والے جنگیز جاشکن کی پیدائش 1982ء میں استنبول میں ہوئی۔ وہ سپورٹس اکیڈمی کے گریجویٹ ہیں اور پیشہ ور باسکٹ بال کھلاڑی بھی ہیں۔ 2002ء میں انھوں نے ماڈلنگ اور اداکاری شروع کی۔ 2005ء میں انھوں نے اپنے پہلے ٹی وی ڈرامے میں کام کیا۔ دیریلس ارطغرل سے پہلے ان کے کریئر کا سب سے بڑا پراجیکٹ فتح 1459 تھا۔ اس کے علاوہ انھوں نے 2012ء میں ریلیز ہونے والی فلم داغ میں بھی کام کیا ہے۔

سیلجان: دیدم بالچن

اور اگر ڈرامے میں ارطغرل کے بھائی گنگودو کی بیوی سیلجان کی سازشوں سے آپ بھی متاثر ہوئے ہیں تو دیدم بالچن سے ملیے۔ ان کی پیدائش 1982ء میں انقرہ میں ہوئی۔ انھوں نے انقرہ یونیورسٹی سے تھیٹر میں ڈگری حاصل کی اور پھر استنبول چلی گئیں جہاں انھوں نے کئی فلموں اور ڈرامہ سیریز میں کام کیا۔ وہ تھیٹر میں بھی کام کر چکی ہیں اور کئی انعامات بھی جیت چکی ہیں۔ رواں ماہ مئی کی 9تاریخ کو انھوں نے اپنے منگیتر جان ایدین سے شادی کر لی ہے۔ ویسے تو شادی جون میں ہونے والی تھی لیکن کورونا وائرس کی وبا کے پیش نظر وہ ایک چھوٹی سی تقریب میں شادی کے بندھن میں بندھ گئے۔ انھوں نے اس شادی کی تقریب کو اپنے پیاروں کے ساتھ زوم پر شیئربھی کیا۔

٭٭٭

ارطغرل کی محبوبہ اور پھر بیوی کا کردار ادا کرنے والی اسرا بِلگِچ نے پہلے ہیجتیپ یونیورسٹی سے آثار قدیمہ میں ڈگری حاصل کی، پھرانقرہ کی بلکینت یونیورسٹی سے بین الاقوامی امور میں ڈگری حاصل کی اور اب قانون کی تعلیم حاصل کر رہی ہیں۔

ارطغرل کے بھائی گنگودو کی بیوی کا کردار ادا کرنے والی دیدم بالچن نے رواں ماہ مئی کی 9تاریخ کو اپنے منگیتر جان ایدین سے شادی کر لی ہے۔ کورونا وائرس کی وبا کے پیش نظر وہ ایک چھوٹی سی تقریب میں شادی کے بندھن میں بندھ گئے۔ انھوں نے اس شادی کی تقریب کو اپنے پیاروں کے ساتھ زوم پر شیئربھی کیا۔


ای پیپر