Indian farmers, Holi, copies, controversial agricultural law, PM Modi, BJP
29 مارچ 2021 (12:33) 2021-03-29

نیو دہلی: بھارتی کسان مودی کے خلاف ڈٹ گئے ، متنازعہ زرعی قانون کی کاپیاں نذر آتش کر کے 'ہولی' منائی ۔

متنازعہ زرعی قانون کے خلاف احتجاج کرنے والے بھارتی کسانوں نے ہولی بھی منفرد انداز میں منائی ، دہلی کی سرحدوں پر کیمپ لگا کر ہولی کے موقع پر آگ جلا کر متنازعہ زرعی قانون کی کاپیاں جلا ڈالی ۔

واضح رہے کہ کسانوں نے 5 اپریل کو ملک بھر میں فوڈ کارپوریشنز کے گھیراؤ کا اعلان کیا ہے ۔

متنازعہ زرعی قانون کے خلاف بھارتی کسان ڈٹ ہوئے ہیں ، انہوں نے احتجاج کے 4 مہینے پورے ہونے پر ایک بار پھر پورا بھارت بند کرکے احتجاج کیا ۔ کسان پنجاب ، ہریانہ سمیت دہلی کے 31 مقامات پر بیٹھ گئے تھے ۔

یاد رہے کہ بھارتی کسان تین متنازع قوانین کی واپسی کے لیے 26 نومبر سے سڑکوں پر ہیں ۔

بھارتی میڈیا کے مطابق بھارت کے مختلف علاقوں میں خواتین کسانوں کی بڑی تعداد احتجاج کر رہی ہے ، مشرقی پنجاب سے ٹکری باڈر پر خواتین شیر خوار بچوں کو بھی ساتھ لے آئیں ۔ کسان خواتین کا کہنا تھا کہ کاشتکاروں کی تحریک نے نئی نسل کو اپنے حقوق کے لیے لڑنا سکھا دیا ہے ۔ دھرنے میں موجود کارکنوں نے مطالبات کی منظوری تک ڈٹے رہنے کے عزم کا اظہار کیا ہے ۔

خیال رہے کہ مودی سرکار کسانوں کے کچھ مطالبات ماننے کو تیار ہے لیکن وہ سارے مطالبات تسلیم کرنے پر ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کر رہی ہے ۔


ای پیپر