Suez Canal, blockage, prices, petroleum products
29 مارچ 2021 (09:20) 2021-03-29

انقرہ : مصر کی نہر سوئز میں جہاز کے پھنس جانے سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں دو گنی ہو چکی ہیں جبکہ عالمی معیشت کو بھی شدید نقصان پہنچ رہا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق جہاز کو نکالنے کے لیے کوششیں جاری ہیں ، اس حوالے سے نہر سوئز حکام کا کہنا ہے کہ جہاز کے ارد گرد سے 20 ہزار ٹن ریت ہٹائی جا چکی ہے ۔ مصر کے صدر عبد الفتاح السیسی کی جانب سے جہاز کا سامان ہلکا کرنے کی تیاریوں کا حکم دیا گیا ہے ۔ 321 جہاز اور کشتیاں بحری جہاز کے نکلنے کا انتظار کر رہی ہیں ۔

خیال رہے کہ جہاز کے مالک نے برطانوی میڈیا سے بات کرتے ہوئے بتایا تھا کہ جہاز کو نکالنے کے لیے 10 بوٹس اپنا کام جاری رکھے ہوئے ہیں ۔ اس سے قبل ایک جاپانی کمپنی نے بھی جہاز کو نکالنے کی کوشش کی تھی جو بے سود رہی تھی ۔

جاپانی بحری جہاز منگل کے روز ایشیا اور یورپ کو ملانے والے اہم تجارتی راستے نہرسوئز میں پھنسا تھا جس سے عالمی تجارت شدید متاثر ہوئی ہے ۔

واضح رہے کہ سیکڑوں کنٹینرز سے لدا ایور گیون مال بردار بحری جہاز نہر سوئز میں پھنسا ہوا ہے ۔

ہوا کے زور پر اس جہاز نے رخ کیا بدلہ ، یہ بنا مقصد کا پھاٹک بن گیا ۔ اس اہم ترین معاشی گزر گاہ سے روزانہ 10 ارب ڈالرز مالیت کا بحری ٹریفک گزرتا ہے ۔

لیکن اس حادثے کے بعد سے 150 کے قریب چھوٹے بڑے جہاز راستہ کھلنے کے انتظار میں کھڑے سوکھ رہے ہیں ۔

ماہرین کے مطابق اس کام میں ایک ہفتہ مزید لگ سکتا ہے جس سے امکان ہے کہ پاکستان سمیت دنیا کے کئی ممالک میں تیل کے دام مزید اوپر چلے جائیں ۔


ای پیپر