The Punjab government is obstructing the rehabilitation of local bodies, Ahsan Iqbal said
کیپشن:   فائل فوٹو
29 مارچ 2021 (08:24) 2021-03-29

نارووال: مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال نے کہا ہے کہ حکومت پنجاب بلدیاتی اداروں کی بحالی میں روڑے اٹکا رہی ہے۔ ابھی تک بلدیاتی اداروں کی ساکھ بدلنے کیلئے جو نوٹیفکیشن کئے گئے تھے انھیں واپس نہیں لیا گیا۔

لیگی رہنما نے کہا ہے کہ پاکستان میں نئے الیکشن ذریعے اہل حکومت نہ لائی گئی تو شدید بحران پیدا ہو جائے گا، پاکستان کے تمام محب وطن لوگ میڈیا میں اس قومی بحران کے حل بارے سوچیں۔

یہ بات انہوں نے گزشتہ روز نارووال میں میڈیا سے گفتگو میں کہی۔ ان کا کہنا تھا کہ اس کا حل ایک ہے کہ نئے انتخابات کی راہ ہموار کرتے ہوئے پاکستان عوام سے رجوع کیا جائے، وقت آ گیا ہے کہ نالائق حکومت کو مزید آکسیجن نہ دی جائے، یہ حکومت فوت ہو چکی ہے، اس لاش کو جتنی دیر رکھیں گے، تعفن پھیلتا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ ب اس سیاسی لاش کو جو 2018ء میں دھاندلی سے لائی گئی تھی، دفن کرنے کا وقت آ گیا ہے تا کہ اس سے ملک برباد نہ ہو۔ سپریم کورٹ کا شکریہ ادا کرتا ہوں جن کی وجہ سے پنجاب کے 58 ہزار بلدیاتی نمائندوں کو زندگی ملی ہے۔

احسن اقبال کا کہنا تھا کہ حکومت پنجاب سپریم کورٹ فیصلے اور آئین کی خلاف ورزی کر رہی ہے۔ حکومت کی کیفیت اناڑی بچے جیسی ہے۔ حکومت تمام اداروں کو جنجھلاہٹ کیساتھ توڑ رہی ہے۔ اس نے پارلیمنٹ کو تباہ کر دیا جبکہ ایوان صدر کو آرڈیننس فیکٹری بنا دیا ہے۔

انہوں نے الزام عائد کیا کہ حکمران سٹیٹ بینک کو گروی رکھتے ہوئے آئی ایم ایف کا ذیلی ادارہ بنا رہے ہیں، اب پاکستان کی اقتصادی پالیسی اسلام آباد میں نہیں، آئی ایم ایف کے بابو واشنگٹن میں بنایا کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی بربادی کی وجہ یہ حکومت پاکستان کی معاشی ترقی کو کریش کر دیا ہے جو ن لیگ نے 5 سال میں پیدا کی تھی۔ اس حکومت نے 9 سو ارب کے ٹیکس لگا دیئے ہیں۔


ای پیپر