نواز شریف کا ڈرامہ عوام کے سامنے آ گیا ،ایجنڈا ذاتی ہے ،بلاول بھٹو 
29 مارچ 2018 (21:23)

ٹھٹھہ : پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ 2018کے انتخابات میں عوام کو فیصلہ کرنا ہو گا کہ وہ کیسی جماعت چاہتے ہیں، آپ کے تعاون سے پیپلز پارٹی پورے ملک سے ووٹ حاصل کرے گی ،جیت کر آپ کے مسائل حل کرے گی، پیپلز پارٹی صرف شوبازی نہیں کرتی بلکہ کام کرتی ہے، جتنا کام پیپلز پارٹی نے کیا اتنا کسی نے نہیں کیا، نواز شریف کا ڈرامہ عوام کے سامنے آ گیا ہے، نواز شریف کا تمام ایجنڈا ذاتی مفادات کےلئے ہے، میرا آج بھی اور کل بھی یہی مطالبہ ہے کہ ملک میں برابری کا قانون ہونا چاہیے، کوئی شخص بھی قانون سے بالاتر نہیں،پرویز مشرف کئی ایک کیسوں میں مطلوب ہیں انہیں ضرور واپس لانا چاہیے،پیپلز پارٹی برسراقتدار آنے کے بعد کیٹی بندر کو ایک مثالی بندرگاہ بنائے گی،اٹھارہویں ترمیم پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرے گی،حکومت نے این ایف سی ایوارڈ بھی نہیں دیا، اگر کسی نے کام کیا ہے تو وہ صرف سندھ حکومت ہے، (ن)لیگ نے اشتہارات پر کام کیا، پروپیگنڈہ پر خرچ کیا، کراچی دنیا کا وہ واحد شہر ہے جہاں عوام کو سائبر نائیف ٹیکنالوجی کا مفت علاج ملے گا۔وہ جمعرات کو کراچی ٹھٹھہ کیرج وے کے افتتاح کے موقع پر تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔

چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی نہ صرف عوام کے مسائل سمجھتی ہے بلکہ مسائل کو حل بھی کر سکتی ہے، ان کی پارٹی دہشت گردی کا مقابلہ بھی کر سکتی ہے اور خارجہ امور بھی سنبھال سکتی ہے، عوام مسائل کا حل چاہتے ہیں، بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام ایک انقلابی پروگرام ہے، پیپلز پارٹی صوبائی سطح پر بھی غربت کے خاتمے کےلئے اقدامات کر رہی ہے، ہم نے2009سے اس پروگرام کے تحت غریب عورتوں کو بلاسود قرضے دیئے ہیں تا کہ وہ اپنا کاروبار شروع کر سکیں۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ اس وقت تک6 لاکھ خاندانوں کو سندھ حکومت نے غربت سے نکالا، ہم نے دل کے امراض کا جنوبی ایشیاءکا سب سے بہترین ہسپتال کراچی میں قائم کیا، اس کے علاوہ سکھر، ٹنڈو محمد خان، لاڑکانہ، حیدرآباد میں بھی دل کے علاج کے ہسپتال کھولے ہیں جہاں مفت علاج ہوتا ہے، اس کے علاوہ کراچی میں کینسر کے علاج کےلئے بھی پرائیویٹ سیکٹر کے ساتھ مل کر ہسپتال قائم کیا ہے جہاں مفت علاج ہوتا ہے، کراچی دنیا کا وہ واحد شہر ہے جہاں عوام کو سائبر نائیف ٹیکنالوجی کا مفت علاج ملے گا۔ انہوں نے کہا کہ اگر کسی نے کام کیا ہے تو وہ صرف سندھ حکومت ہے، (ن)لیگ نے اشتہارات پر کام کیا، پروپیگنڈہ پر خرچ کیا، شہباز شریف نے میٹرو ضرور بنائی ہے لیکن پچھلے دس سالوں میں انہوں نے صرف ایک نا مکمل ہسپتال کا افتتاح کیاہے۔ چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ 2018کے انتخابات میں عوام کو فیصلہ کرنا ہو گا کہ وہ کیسی جماعت چاہتے ہیں، پیپلز پارٹی انتخابات جیت کر آپ کے مسائل حل کرے گی، آپ کو روٹی، کپڑا اور مکان دے گی، آپ کو صحت کی سہولیات مفت فراہم کرے گی۔ بلاول بھٹو نے عوام سے تعاون اور ووٹ کا تقاضا کرتے ہوئے کہا کہ آپ کے تعاون سے پیپلز پارٹی پورے ملک سے ووٹ حاصل کرے گی اور حکومت بنائے گی،پیپلز پارٹی صرف شوبازی نہیں کرتی بلکہ کام کرتی ہے، جتنا کام پیپلز پارٹی نے کیا اتنا کسی نے نہیں کیا۔

ایک سوال کے جواب میں بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ نواز شریف کا ڈرامہ عوام کے سامنے آ گیا ہے، نواز شریف کا تمام ایجنڈا ذاتی مفادات کےلئے ہے، میرا آج بھی اور کل بھی یہی مطالبہ ہے کہ ملک میں برابری کا قانون ہونا چاہیے، کوئی شخص بھی قانون سے بالاتر نہیں۔سابق صدر پرویز مشرف سے متعلق سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پرویز مشرف کئی ایک کیسوں میں مطلوب ہیں، وہ شہید بے نظیر قتل کیس اور اکبر بگٹی قتل کیس میں مطلوب ہیں انہیں ضرور واپس لانا چاہیے۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ دنیا میں نظریاتی سیاست اپنا مقام کھو رہی ہے لیکن پیپلز پارٹی ایک نظریاتی جماعت ہے اور اپنے نظرئیے پر ہی انتخابات لڑے گی، ووٹ حاصل کرے گی اور حکومت بنائے گی۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا مطالبہ ہے کہ کیٹی بندر کو سی پیک کا حصہ بنایا جائے لیکن (ن) لیگ نے اس مطالبے کی مخالفت کی، پیپلز پارٹی برسراقتدار آنے کے بعد کیٹی بندر کو ایک مثالی بندرگاہ بنائے گی۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ (ن) لیگ پانچ سال سے اٹھارہویں ترمیم کی خلاف ورزی کر رہی ہے، حکومت نے این ایف سی ایوارڈ بھی نہیں دیا، پیپلز پارٹی اٹھارہویں ترمیم پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرے گی۔


ای پیپر