نوبل انعام یافتہ ملالہ کی 5سال بعد وطن واپسی پر تقریب میں جذباتی مناظر
29 مارچ 2018 (15:59) 2018-03-29

اسلام آبا د:کم عمر میں نوبل انعام یافتہ ملالہ یوسف زئی کی پاکستان واپسی پر سخت سکیورٹی کے انتظامات کیے گئے ۔اس موقع پر ملالہ کے اہل خانہ بھی ان کے ہمراہ تھے ۔پانچ سال وطن واپسی پر ملالہ جذباتی ہوگئیں ۔ ملالہ کا کہنا تھا کہ یہ ان کی زندگی کا سب سے زیادہ خوشی کا دن ہے کہ وہ اپنے وطن میں اپنی متی پر کھڑی ہے ۔ ملالہ تقریب میں اپنی پاکستان واپسی پر آبدیدہ ہوگئیں ۔

اپنے اعزاز میں تقریب کے دوران ملالہ نے حاضرین کو اردواور پشتو میں بھی خوش آمدید کہا ۔ میں چاہتی تو کبھی ملک نہ چھوڑتی لیکن ڈاکٹروں نے سرجری کا کہا ۔ ملالہ نے مزید کہا کہ پاکستان کا مستقبل پاکستان کی نوجوان نسل ہی ہے ۔ابھی تک یقین نہیں آرہا ہے کہ پاکستان میں ہوں ۔ ملالہ یوسف زئی گزشتہ رات غیرملکی پرواز ای کے 614 کے ذریعے برطانیہ سے اسلام آباد پہنچیں جہاں سے وہ فیملی کے ہمراہ ایئر پورٹ سے اسلام آباد کے نجی ہوٹل پہنچیں جہاں ان کا شاندار استقبال کیا گیا، ان کی ساڑھے 5 سال بعد پاکستان آمد پر بے نظیرانٹرنیشنل ایئرپورٹ پر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے۔

واضح رہے سوات میں کالعدم تحریک طالبان پاکستان کی جانب سے 2012 میں ملالہ یوسف زئی پر حملہ کیا گیا تھا جس کے بعد وہ علاج کی غرض سے برطانیہ منتقل ہوگئی تھیں جہاں صحت یاب ہونے کے بعد انہوں نے اعلیٰ تعلیم کے لیے آکسفورڈ یونیورسٹی میں داخلہ لیا۔سال 2012 میں لڑکیوں کی تعلیم کیلئے آواز اٹھانے پردہشت گردی کا شکار ہونے والی ملالہ یوسف زئی 6 سال بعد پاکستان آئیں توسوشل میڈیا پر ٹاپ ٹرینڈ بن گیا۔ شہری ان کی واپسی کو خوش آئند قرار دے رہے ہیں جبکہ بعض نے تنقید بھی کی ۔


ای پیپر