کیا کرونا وائرس ووہان کی لیبارٹری سے ہی نکلا ،فرانس کا اہم انکشاف
29 جون 2020 (19:07) 2020-06-29

پیرس :فرانس نے حال ہی میں اعلان کیا ہے کہ اس کے پاس ایسی معلومات نہیں ہیں جن سے نوول کروناوائرس کے آغاز اور ووہان کے انسٹی ٹیوٹ برائے ویرولوجی کے مابین کسی ممکنہ تعلق کے حوالے سے کوئی نتیجہ اخذ کیا جاسکے۔جہاں تک وائرس کے آغاز کا تعلق ہے ، وزارت برائے یورپ اور خارجہ امور کے پاس اس وقت تک ایسی کوئی اطلاعات نہیں ہیں جس سے یہ نتیجہ اخذ کیا جاسکے کہ وائرس کے آغاز اور ووہان میں انسٹی ٹیوٹ برائے ویرولوجی کے کام کے درمیان ممکنہ تعلق کو منسلک کرسکیں ، یہ بات وزارت نے اس وقت کہی جب اس ماہ کے شروع میں سینٹ سے خطاب کیا۔

فرانس نے اس قرار داد کی حمایت کی تھی جو کہ مئی میں عالمی صحت اسمبلی میں یورپی یونین کی جانب سے پیش کی گئی ،جس میں عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او ) سے درخواست کی گئی تھی وہ عالمی تنظیم برائے جانوروں کی صحت (او آئی ای)اور اقوام متحدہ کے ادارہ برائے خوراک و زراعت کے ساتھ قریبی تعاون کے ذریعے اس وائرس کے جانوروں سے متعلق ذریعے اور انسانی آبادی کو اس کے منتقلی کے طریقہ کار کی نشاندہی کریں، یہ بات وزارت کی جانب سے ایک خط میں کہی گئی ہے جو کہ پارلیمنٹ کے ایوان بالا کو جواب میں لکھا گیا ہے۔

خط میں کہا گیا ہے کہ اس مرحلے پر فرانس کی ترجیح یہ ہے کہ اس عالمی وبا کے خلاف بین الاقوامی جنگ جاری رکھی جائے اور یہ کہ کثیر الجہتی کو مستحکم کیا جائے۔اس ترجیحی مقصد کے ساتھ فرانس کے وزیر برائے یورپ اور خارجہ امورنے اپنے چینی ہم منصب کے ساتھ متعدد بار بات چیت کی ہے۔


ای پیپر