نان۔فائلر۔۔
29 جون 2019 2019-06-29

دوستو، لاہور میں سواتین سال سے زیادہ عرصہ گزارا، نان کے ساتھ مختلف ڈشز کھائیں، یہاں تک کہ قیمے والا، آلو والا نان بھی کھایا، لیکن’’ نان ۔ فائلر ‘‘ کسی ہوٹل پر ملی نہ کہیں یہ ’’کھابا‘‘ دستیاب ہوا۔ اب کراچی شفٹ ہوچکے ہیں تو پتہ چلا جو ٹیکس نہ دے تو اسے ’’ نان فائلر ‘‘ کہتے ہیں۔۔ بتانے والے کا چہرہ غور سے دیکھا ،جس کے چہرے پر بلاکی سنجیدگی طاری تھی، پہلے ہم سمجھے وہ مذاق کررہے ہیں، لیکن جب ان کا سنجیدگی کی حد تک سنجیدہ چہرہ دیکھاتو ان کی بتائی ہوئی بات پر یقین کرنا ہی پڑا، لیکن مصیبت یہ ہے کہ ہم سوال کرنے سے باز رہ نہیں پاتے، یہ بری عادت ہم میں بچپن سے ہی ہے، ہم بچپن سے ہی بڑے’’سوالی‘‘ تھے، اماں،ابا کوئی بات کریں یا پھر کوئی رشتہ دار کچھ بولے، ہمارا سوال تیار ہوتا تھا۔۔ جس پر اکثر ڈانٹ بھی سنتے تھے، ڈانٹ بھی اسی صورت سننے کو ملتی تھی جب ہمارا سوال ’’آؤٹ آف کورس‘‘ ہوتا تھا اور جس کا کسی کے پاس کوئی جواب نہیں ہوتا تھا، ہم نے نان فائلر کی تشریح کرنے والے دوست سے سوال کرہی دیا، ہم نے محترم سے پوچھا، یار اس ملک میں کوئی ایک پاکستانی بتادو جو ٹیکس نہیں دیتا، ماچس کی ڈبی سے لے کر سگریٹ کے پیکٹ تک، پانی کی بوتل سے لے کر کولڈڈرنکس، مصالحہ جات سے لے کر دال،چینی،پٹرول، سی این جی، گیس، بجلی، کون سی چیز ایسی ہے جس پر پاکستانیوں سے ٹیکس نہیں لیاجاتا؟؟ اس کا مطلب توپھر یہ ہوا کہ سارا پاکستان ہی ’’ فائلر ‘‘ ہے پھر حکومت ’’ نان فائلر ‘‘ کس کو کہہ رہی ہے؟؟ ہمارے سوال کو دوست نے سنا ان سنا کردیا۔۔ اور سگریٹ کے لمبے لمبے کش لیتے ہوئے آگے بڑھ گئے۔۔

کیسی عجیب بات ہے کہ دوسرے ممالک میں والدین بچوں کوسمجھاتے رہتے ہیں کہ بیٹا،محنت کروگے تو تم کامیاب ہوجاؤگے، جب کہ دوسری جانب ہمارے ملک میں والدین اپنے بچے کے دماغ میں یہ بات ڈال دیتے ہیں کہ اس کے دانتوں میں گیپ ہے یہ بہت پیسے والا ہوگا۔۔ایک مراثی فارغ بیٹھا تھا، وہ کہتے ہیں ناں، خالی دماغ شیطان کا کارخانہ ہوتا ہے، اس جیسے دو،تین اور فارغ مراثی اس کے اطراف آکر بیٹھ گئے تو پہلے والا مراثی سگریٹ کو چھنگلی والی سائیڈ سے پکڑ کر منہ کے قریب لے گیا اور زوردار کش لگاتے ہوئے کہنے لگا۔۔گائے کے خالص دودھ، باسمتی چاول اور دیسی شکر سے کھیر بناؤں اور پھر ٹھنڈی کرکے انگلی لگا لگا کر کھاؤں گا، سبحان اللہ، واہ وا۔۔ سننے والوں نے پوچھا، ان سب چیزوں میں سے تمہارے پاس کیا ہے؟؟ تو مراثی بولا۔۔انگلی۔۔ یہی حال اس وقت گورنمنٹ کا ہے۔۔ اعلانات اور باتیں بڑی بڑی لیکن کارکردگی اب تک زیرو۔۔بقول باباجی، باتیں کروڑوں کی دکان پکوڑوں کی۔۔باباجی فرماندے نے۔۔ میرے نال دھوکہ ہو گیا،ڈیڑھ ٹن دا اے سی لے کے آیا،تول کے چیک کیتیاں پندرہ کلو دا نکلیا۔۔

ہمارے پیارے دوست کے مطابق ’’فالودہ‘‘ دنیا کی واحد ایسی چیز ہے جس کی بندے کو کبھی سمجھ نہیں آتی کہ اسے کھانا ہے یا پینا ہے۔۔پیارے دوست مزید فرماتے ہیں کہ ۔۔یہ دنیا مکافات عمل ہے، عورتیں مردوں کا خون چوستی ہیں اور جوئیں عورتوں کا۔۔انہوں نے ہی ہمیں بتایا کہ ۔۔انگریزی ٹیچر نے اردو کی استانی سے شادی کرلی، ایک سال بعد ان کے گھر’’ ب بی ‘‘ ہوا۔۔آج تو باباجی نے حد ہی کردی،کہتے ہیں فیس بک پر تمہارے ہزاروں دوست ہیں، ہمارا پرانا والا فریج ہی بکوادو۔۔بابا جی فرماتے ہیں پتر یہ جو کامن سینس ہے نا بالکل بھی کامن نہیں ہے۔۔یہ تو تھیں ہمارے پیارے دوست اور باباجی کی باتیں اب کچھ ہماری بھی اوٹ پٹانگ سن لیجئے۔۔ہمارے ایک دوست کو چائے تک بنانی نہیں آتی تھی، پھر ہم نے اسے شادی کا مشورہ دیا، الحمدللہ اب وہ کپڑے بھی دھولیتے ہیں اور برتن مانجھنا بھی آگئے ۔۔ہمارے معاشرے میں کاکے کو کھلانے کے لئے کھلونا نہیں بلکہ ایک اور کاکا آتا ہے۔۔قبرستان بھرے پڑے ہیں ایسے لوگوں سے جو کہتے تھے چائے پینے سے رنگ کالاہوجاتا ہے۔۔ بھول جانے کی بیماری کا ایک فائدہ یہ ہوتا ہے کہ بندہ ایک ہی لطیفہ کئی بار انجوئے کر سکتا ہے۔۔ایک دوست نے دوسرے دوست کو جانور کہا تو وہ ناراض ہو گیاپھر اسی نے اپنے ناراض دوست کو شیر کہہ کر منا لیا۔۔

ہمارا کالم چونکہ غیرسیاسی ہوتا ہے اس لئے ہماری کسی بات کا رخ سیاست کی طرف موڑنے کی کوشش نہ کی جائے۔۔کالم کا موضوع چونکہ ’’ نان فائلر ‘‘ ہے اس لئے پھر اپنے موضوع کی جانب چلتے ہیں اور اپنی روایتی اوٹ پٹانگ باتیں کرتے ہیں۔۔ نان فائلر ہوشیار ہوجائیں ایف بی آر اب سخت ایکشن لینے کا فیصلہ کرچکا ہے۔۔ نان فائلر کی سائیکل یا موٹر سائیکل میں ہوابھرنے والے دکاندار کو بھاری جرمانہ عائد کیا جائے گا۔۔ نان فائلر کے سسرال جانے پر سخت پابندی عائد کی جائے گی۔۔ نان فائلر دوسری شادی قطعی نہیں کرسکے گا۔۔ نان فائلر کو سموسمے کے ساتھ چٹنی لینے پر مکمل پابندی ہوگی۔۔ نان فائلر کو پٹھوروں کے ساتھ چنے اور اچار نہیں دئیے جائیں گے۔۔ نان فائلر کے گھر بجلی 220 کی بجائے 100 وولٹ دی جائے گی۔۔ نان فائلر کو کرکٹ کھیلنے کے دوران بال فراہم نہیں کی جائے گی۔۔ نان فائلر کو بال کٹوانے کی اجازت نہیں ہو گی۔۔ نان فائلر اگر ہاکی کھیلتا ہے تو ہاکی اسٹک استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔۔ نان فائلر کسی فائلر کی شادی میں شرکت نہیں کر سکے گا۔۔ نان فائلر کو ٹرین اور بس کا ٹکٹ ڈبل قیمت پر ملے گاساتھ ہی اسے کسی صورت سیٹ پر بیٹھنے کی اجازت نہیں ہو گی۔۔ نان فائلر کو بس اڈوں ریلوے اسٹیشن اور ایئر پورٹس پر ٹائلٹ کی سہولت مہیا نہیں ہوگی۔ ۔ نان فائلر کو پتی والے پان میں کسی بھی قسم کی پتی ڈالنے پر پان شاپ سیز کردی جائے گی۔۔پٹرول پمپ پر نان فائلر کو پٹرول کی جگہ ’’چماٹ‘‘ ملیں گے۔۔ نان فائلر کے بیوی کے ساتھ اکیلے کمرے میں جانے پر پابندی ہوگی۔۔پتہ کرو کوئی کم رہ تے نہیں گیا؟قصہ مختصر، نان فائلر انسان ہی نہیں۔۔

اور اب چلتے چلتے آخری بات۔۔تیز بھاگنے سے پرہیز کریں،جب آپ تیز بھاگتے ہیں تو ظاہر ہے سانس پھول جاتی ہے،آپ تیز تیز سانس لینے لگتے ہیں۔اس سے یہ ہوتا ہے کہ مقدر میں جو سانسیں لکھی ہیں وہ آپ جلدی جلدی لینے لگتے ہیںاور ا س طرح آپ کی سانسیں بھی جلدی ختم ہو سکتی ہیںاس لئے مشورے پہ عمل کریں اور زیادہ جیئیں۔۔خوش رہیں اور خوشیاں بانٹیں۔۔


ای پیپر