قومی اسمبلی کا اجلاس ہنگامے کی نظر ہوگیا
29 جولائی 2019 (20:22) 2019-07-29

اسلام آباد :کرپشن کا شورشرابا اورعوام کے منتخب نمائندوں کی مقدس ایوان میں لڑائیاں ،عوام کا خیال کون رکھے گا ، قومی اسمبلی کا اجلاس ڈپٹی اسپیکر قاسم سوری کی زیر صدارت جاری تھا کہ پیپلزپارٹی اور پی ٹی آئی ارکان کے درمیان جھگڑا شروع ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی اجلاس میں بدنظمی اور ہنگامہ آرائی کے دوران پیپلزپارٹی اور تحریک انصاف کے ارکان کا آپس میں سخت جملوں کا تبادلہ ہوا جس کے بعد ڈپٹی اسپیکر نے اجلاس یکم اگست تک ملتوی کردیا۔ قومی اسمبلی کے اجلاس میں دونوں جماعتوں کے ارکان اسمبلی ایک دوسرے کو مارنے کے لیے آگے بڑھے لیکن دیگر اراکان اسمبلی نے بیچ بچاﺅ کروایا ، ڈپٹی اسپیکر نے اجلاس یکم اگست تک ملتوی کردیا۔

دوسری جانب خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ ہم نے اس پارلیمنٹ میں بڑا وقت گزارا ہے، بات کرنے کے بعد بات سننی بھی چاہئے، امریکہ گئے فوٹو سیشن ہوا، ملک کے لیے کوئی بڑی سپورٹ آئی؟ ہم بھی پاکستانی ہیں اور ہم سب پاکستان کی ترقی چاہتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ دیکھنا یہ ہے کہ ملک میں انصاف ہوتا ہے کہ نہیں ہوتا، تکلیف اس وقت ہوتی ہے کہ کچھ علاقے اپنی مرضی چلاتے ہیں، اسپیکر قومی اسمبلی بھی اپنا کردار ادا نہیں کرتے، ہم نے کبھی اسپیکر کو اتنا بے بس نہیں دیکھا۔


ای پیپر