اگر کوئی ویڈیو یا تصویر ہے تو سامنے لائو : رانا ثنا اللہ
29 جولائی 2019 (19:09) 2019-07-29

لاہور:مسلم لیگ (ن) کے منشیات کیس میں گر فتاری ایم این اے رانا ثنا اللہ خان نے اے این ایف اور حکومت کو چیلنج کرتے ہوئے کہا ہے کہ اے این ایف یا حکومت کے پاس میری گاڑی سے منیشات بر آمد کر نے کی کوئی ویڈیو یا تصویر تو سامنے لائی جائے ‘اے این ایف مر ضی کا فیصلہ لینے کیلئے مر ضی کا جج تعینات کر نا چاہتی ہے‘کل بھی نوازشر یف کے ساتھ تھا آج بھی نوازشر یف کے ساتھ ہوں ۔

عدالت میں پیشی کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رانا ثنا اللہ خان نے کہا کہ ویڈیو کے بارے وفاقی وزیر شہریار آفریدی دعویٰ کر چکے ہیں کہ منشیات برآمدگی کا ثبوت اس میں موجود ہے،یہ ویڈیو کی بات کرتے ہیں میں انہیں کہتا ہوں کہ مدعی میجر عزیز اللہ کی گاڑی میں میر ے ساتھ بیٹھنے یا بات کرنے کی کوئی تصویر دکھا دیں جس میں وہ مجھ سے کوئی سوال کر رہا ہو کہ ہم نے آپ کی گاڑی سے کوئی برآمدگی کی ہے ۔ مجھے پکڑا گیا اور وہاں سے تھانے لے آئے اور یہاں بھی ایک لفظ گفتگو نہیں کی گئی اگلے روز کہہ دیا گیا ک آپ سے 15کلو ہیروئن برآمد ہوئی ہے ۔چالان پیش کر کے اپنی مرضی کا متن لکھ لیا گیا ہے او رمیر ابیان ہی نہیں لیا گیا ۔

بتایا جائے وہ ویڈیو کہاں ہے جس میں اس کے ثبوت تھے۔ میرے اعترافی بیان کی بھی فرضی کہانی ہے ، اب ان کو اپنے فراڈ کو ثابت کرنے کے لئے مرضی کا جج چاہیے۔انشا اللہ ہم سر خرو ہوں گے او راللہ تعالیٰ ان کے جھوٹ کو ایکسپوز کرے گا۔میں اپنی پارٹی ،لیڈر نواز شریف اور شہباز شریف کے ساتھ ہوں ، پہلے میں سو فیصد تھا اب میں ایک ہزار فیصد ساتھ ہوں ۔چیئرمین سینیٹ کے خلاف تحریک عدم اعتماد کامیاب ہو گی ۔


ای پیپر