NAB, loyalty, state, Pakistan, Chairman NAB, opposition parties
29 دسمبر 2020 (15:50) 2020-12-29

اسلام آباد: چیئرمین نیب جسٹس ریٹائر جاوید اقبال نے کہا ہے کہ نیب کا کسی سیاسی جماعت ، گروہ یا شخص سے کوئی تعلق نہیں، نیب کی وفاداری صرف ریاست پاکستان سے ہے۔

تفصیلات کے مطابق قومی احتساب بیورو کے ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس چیئرمین نیب جاوید اقبال کی صدارت میں ہوا ، اجلاس میں ڈپٹی چیئرمین نیب سید اصغر حیدر، پراسیکیوٹر جنرل نیب ، ڈی جی آپریشن نیب اور دیگر سینئر افسران نے شرکت کی۔

اجلاس میں اہم فیصلے کیے گئے جبکہ سابق چیئرمین پی آئی اے اعجاز ہارون ، عبدالغنی مجید اور دیگر کیخلاف نیب ریفرنس کی منظوری بھی دی گئی۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین نیب نے کہا کہ نیب کی ذمہ داری کرپشن کا خاتمہ اور لوٹی گئی رقم کی واپسی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نیب کا کسی سیاسی جماعت ، گروہ یا شخص سے کوئی تعلق نہیں۔ نیب کی وفاداری صرف ریاست پاکستان سے ہے۔

جسٹس ریٹائر جاوید اقبال نے کہا کہ نیب احتساب سب کیلئے کی پالیسی پر سختی سے عمل پیرا ہے ، ملک سے بدعنوانی کا خاتمہ نیب کی اولین ترجیح ہے، نیب نے احتساب سب کیلئے کی پالیسی کے تحت 714 ارب روپے برآمد کرلیے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ نیب کارکردگی کو قومی اور بین الا قوامی اداروں نے سراہا جو اعزاز کی بات ہے۔ نیب پاکستان کا انسداد بدعنوانی کا قومی ادارہ ہے۔ چیئرمین نیب نے ادارے پر لگائے گئے الزامات کو بھی مسترد کر دیا۔

واضح رہے کہ ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا نے کہا تھا کہ چیئرمین نیب کو پارلیمنٹ کی کمیٹیوں کے سامنے پیش ہونا پڑے گا ، کوئی ایسا ادارہ نہیں جو پارلیمنٹ میں آکر اپنا جواب نہ دے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سلیم مانڈوی والا نے کہا کہ نیب کی وجہ سے ساری بیورو کریسی پریشان ہے ، بیورو کریسی کے سامنے سب سے بڑی رکاوٹ نیب ہے۔ انہوں نے کہا کہ نیب افسروں کے کاغذات ، گوشوارے چیک کیے جائیں۔


ای پیپر