Hanadi Halwani,Israeli police,arrest,social worker,Al-Aqsa Mosque
29 دسمبر 2020 (14:11) 2020-12-29

مقبوضہ بیت المقدس :قابض اسرائیلی پولیس نے ایک کارروائی کے دوران مسجد اقصی کی مستقل نمازی اور سرکردہ سماجی کارکن ھنادی حلوانی کو گرفتار کرنے کے بعد ایک تفتیشی مرکز منتقل کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ھنادی الحلوانی کو قابض فوج نے گذشتہ روز مسجد اقصی کے باب الاسباط کے باہر سے گرفتار کیا گیا۔ھنای الحلوانی کو اسرائیلی فوج نے 3 دسمبر کو حراست میں لینے کے بعد چند گھنٹے حراست میں رکھا جس کے بعد انہیں رہا کریا تھا۔

ھنادی الحلوانی نے ایک جیکٹ پہن رکھی تھی جس پر لکھا تھا کہ باب رحمہ ہمارا اور مسجد اقصی ہمارا ایمان ہے۔تین دسمبر کو گرفتاری کے بع حلوانی نے تفتیش کاروں سے کہا تھا کہ اس پر عاید کردہ الزامات بے بنیا ہیں۔ اسے محض مسجد اقصی میں نماز کی ادائی اور مسجد کے تحفظ کے لیے سرگرمیوں کے الزام میں گرفتار کیا جاتا ہے۔

یاد رہے کہ اسرائیلی فوج کی طرف سے گزشتہ دنوں مسلسل فلسطینی سماجی کارکنوں  کی گرفتاری کا سلسلہ جاری ہے اسی سلسلہ میں ایک سماجی کارکن حماد گزشتہ 48 دنوں سے اسرائیلی فوج کی طرف سے خفیہ تفتیشی مرکز میں قید ہیں اور انہیں بغیر کسی قانونی وجہ سے ابھی تک لاپتہ رکھا ہوا ہے۔


ای پیپر