pm imran khan,hair transplant,fight,shibli faraz,muustafa nawaz khokar
29 دسمبر 2020 (08:48) 2020-12-29

اسلام آباد:رہنما پیپلزپارٹی مصطفی نواز کھوکھر کی جانب سے ٹی وی پروگرام میں   ڈاکٹر ہمایوں   محمد  پر وزیراعظم  عمران خان کے سرکے  بال لگانے کا الزام عائد کرنے پر وفاقی وزیر اطلاعات  برہم ہوگئے جس دوران دونوں کے درمیان سخت جملوں کا تبادلہ بھی ہوا ، میزبان اینکر نے دونوں میں بیچ بچائو کرادیا۔

ایک نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں رہنما پیپلزپارٹی مصطفی نواز کھوکھر نے کہا کہ ڈاکٹر ہمایوں سے شناسائی کی ایک وجہ یہ ہے کہ انہوں نے عمران خان کے بال لگائے جس پر سینیٹر شبلی فراز  غصے میں آگئے اور دونوں رہنمائوں کے درمیان تلخ کلامی ہوئی جس پر میزبان اینکر نے دونوں میں بیچ بچائو کرایا۔

سینیٹر شبلی فراز نے آرٹی آئی کے سربراہ ڈاکٹر ہمایوں محمد کو بنائے جانے کے حوالے سے کہا کہ مسلم لیگ (ن) اور پیپلزپارٹی نے اداروں کو تباہ کیا ،ڈاکٹر ہمایوں کی تعیناتی قانونی تقاضوں کے مطابق ہوئی ، کیس اسلام آباد ہائیکورٹ میں ہے  اس کا بھی فیصلہ آجائے گا ۔

رہنما پیپلزپارٹی مصطفی نواز کھوکھر نے اس پر کہا کہ ڈاکٹر ہمایوں محمد ہیر ٹرانسپلانٹ کرتے ہیں اس لئے انہیں پمز ہسپتال کے  ایم ٹی آئی کے بورڈ آف گورنرز کا سربراہ بنایا گیا کیونکہ انہوں نے وزیراعظم عمران خان کے بال لگائے تھے جس پر سینیٹر شبلی فراز نے انہیں دھمکی دیتے ہوئے کہاکہ اگر آپ ذاتی چیزوں کو ٹی وی پر لائیں گے تو میں آپ کو نہیں چھوڑوں گا ۔

 مصطفی نواز کھوکھر نے کہا کہ آپ بڑے بھائی ہیں میں آپ کی بہت عزت کرتا ہوں ،اگر آپ ایسا کہیں گے تو آئیں جوکرنا ہے کرلیں ،ا قربا پروری حکومت خود کرتی ہے اور الزام اپوزیشن پر لگاتے ہیں ۔ 


ای پیپر