خاور مانیکا سکینڈل کی ابتدائی رپورٹ وزیر اعظم تک پہنچ گئی
29 اگست 2018 (14:44) 2018-08-29


لاہور:وزیراعظم عمران خان کو خاور مانیکا اور ڈی پی او رضوان گوندل کے درمیان تنازع کے حوالے سے پنجاب حکومت کی ابتدائی رپورٹ موصول ہوئی جس کی بنیاد پر انہوں نے معاملے پر لاتعلق رہنے کا فیصلہ کیا ہے۔


نجی ٹی وی کے مطابق وزیراعظم عمران خان کو خاورمانیکا سے تنازع سے متعلق پنجاب حکومت کی جانب سے ابتدائی رپورٹ غیر رسمی طور پر موصول ہوگئی۔ رپورٹ میں بتایا گیا کہ ڈی پی او نے خود کو ہیرو ثابت کرنے کے لیے سوشل میڈیا کا استعمال کیا تاہم وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے ڈی پی او کو ہٹانے کے لیے دباؤ نہیں ڈالا اور آئی جی پولیس نے غلط بیانی پرڈی پی او کو خود عہدے سے ہٹایا۔وزیراعظم نے رپورٹ ملنے کے بعد واقعہ کو محکمانہ معاملہ قراردیتے ہوئے معاملے سے لا تعلق رہنے کا فیصلہ کیا ہے جب کہ یہ معاملہ پنجاب حکومت خود دیکھے گی۔


دوسری جانب پنجاب کے وزیراطلاعات فیاض الحسن چوہان نے کہا تھا کہ ڈی پی او پاکپتن کے تبادلے سے تحریک انصاف یا پنجاب حکومت کا کوئی تعلق نہیں ان کا تبادلہ شہریوں کی جانب سے متعدد شکایات ملنے کے بعد کیا گیا ۔ واضح رہے کہ خاتون اول بشری بی بی کے سابق شوہر خاور مانیکا کو گارڈز سمیت روکنا پاکپتن پولیس کے سربراہ کو مہنگا پڑگیا تھا آئی جی پنجاب نے ڈی پی او پاکپتن رضوان گوندل کا تبادلہ کردیا تھا۔


ای پیپر