ابوظہبی ،غیر قانونی طور پر مسافروں کو نجی کاروں میں منتقل کرنے والوں کو 3000 ہزار درہم جرمانے کی سزا
28 ستمبر 2020 (12:12) 2020-09-28

ابوظہبی : ابو ظہبی پولیس حکام کے مطابق غیر قانونی طور پر مسافروں کو نجی کاروں میں منتقل کرنے والوں کو  اب  3000 ہزار درہم جرمانہ  بھگتنا پڑے گا۔ 

اپنی سوشیل میڈیا سائٹ پر  ایک آگاہی ویڈیو میں  ابو ظہبی پولیس نے مسافروں کی غیر قانونی آمدورفت اور ان کی سلامتی اور حفاظت پر اس کے منفی اثرات سے متعلق خطرات سے شہریوں کو  خبردار کیا ہے ۔

ابوظہبی پولیس فورس نے نجی گاڑیوں کے ڈرائیوروں پر زور دیا کہ وہ مجاز حکام کی اجازت کے بغیر مسافروں کی آمدورفت کی سرگرمی میں ملوث نہ ہوں۔پولیس نے عوام سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ صرف  منظور شدہ اور لائسنس یافتہ ٹیکسیوں کا استعمال کریں جو بین الاقوامی حفاظت کی ضروریات اور معیارات کے مطابق ہیں اور سب کی حفاظت کو محفوظ رکھنے کے لئے غیر قانونی نقل و حمل سے نمٹنے میں تعاون کریں۔

ابوظہبی پولیس نے اس سے قبل اطلاع دی تھی کہ انہوں نے 2019 میں 3،376 نجی کاریں ضبط کیں ان کاروں کے مالکان ابوظہبی میں مختلف علاقوں سے مسافروں کی غیر قانونی آمد و رفت کرتے پائے گئے۔ پولیس نے بتایا کہ ابوظہبی میں انٹیگریٹڈ ٹرانسپورٹ سینٹر کے تعاون سے ابوظہبی پولیس میں فوجداری سیکیورٹی سیکٹر کی ٹرانسپورٹ سیکیورٹی انتظامیہ کے افسران نے گذشتہ سال کے دوران امارات میں 1111 معائنے کی مہمات کے دوران موٹرسائیکلوں کو بھی  پکڑ لیا۔

یہ ساری کارروائیاں خفیہ پولیس اہلکاروں کے ذریعے ہوئی ہیں جو مسافروں کا بھیس بدل کر ان نجی ٹیکسی ڈرائیورز کو پکڑ تے ہیں ۔

پولیس تحقیقات میں بتایا گیا ہے کہ غیر قانونی ٹیکسی خدمات انجام دینے والی زیادہ تر کاریں ذاتی ملکیت ہوتی  ہیں اور بعض اوقات مالکان غیر قانونی سروس کو چلانے کے لئے بغیر لائسنس ڈرائیوروں کو ملازمت دیتے ہیں۔

محکمہ ٹرانسپورٹیشن سیکیورٹی کے ڈائریکٹر کرنل مبارک عواد بن ماہیروم نے بتایا کہ ابوظہبی پولیس نے غیر قانونی ٹیکسیوں  کو روکنے اور اس طرح کی خلاف ورزیوں کو کم کرنے کے لئے معائنہ کی مہم تیز کردی ہے۔


ای پیپر