چیف جسٹس کیخلاف نازیبا کلمات فیصل رضا عابدی کو مہنگے پڑ گئے
28 ستمبر 2018 (21:51) 2018-09-28

اسلام آباد:اسلام آباد پولیس کو سابق سینیٹر فیصل رضا عابدی کو گرفتار کرنے کی اجازت مل گئی، وزارت داخلہ نے کراچی پولیس کو اسلام آباد پولیس کی معاونت کرنے کی ہدایت کردی، سابق سینیٹر کیخلاف توہین عدالت کے سلسلے میں اسلام آباد میں مقدمہ درج ہے۔

تفصیلات کے مطابق پیپلزپارٹی کے سابق سینیٹر کے خلاف اسلام آباد کے تھانہ سیکرٹریٹ میں پی آر او سپریم کورٹ کی مدعیت میں مقدمہ درج کیا گیا تھا۔مقدمے میں انسداد دہشت گردی اور دیگر دفعات شامل ہیں۔ فیصل رضا عابدی کے خلاف مقدمہ زیر دفعہ 228،500، 505 دو، 506 اور 34 کے تحت درج کیا گیا۔ جبکہ مقدمے میں دہشت گردی کی دفعہ7 اے ٹی اے بھی لگائی گئی۔ فیصل رضا عابدی کے خلاف سائبر کرائم ونگ میں بھی مقدمہ درج کیا گیا۔

ایف آئی آر کے مطابق فیصل رضا عابدی نے چیف جسٹس کے خلاف نازیبازیبا کلمات ادا کئے۔پروگرام آئن ایئر جانے کے بعد فیصل رضا عابدی کی ویڈیو سوشل میڈیا پروائرل ہوئی، جس میں انہوں نے چیف جسٹس ثاقب نثار کو تضحیک کا نشانہ بنایا اور دھمکی آمیز الفاظ استعمال کیے۔ پولیس کے مطابق متعلقہ خاتون اینکر کے خلاف بھی کارروائی کی جائے گی۔ بعد ازاں اسلام آباد پولیس نے فیصل رضا عابدی کیخلاف مزید کاروائی کیلئے وزارت داخلہ سے رابطہ کیا۔اب وزارت داخلہ کی مداخلت کے باعث اسلام آباد پولیس کو کراچی میں موجود فیصل رضا عابدی کی گرفتاری کی اجازت مل گئی ہے۔

وزارت داخلہ نے اس سلسلے میں کراچی پولیس کو اسلام آباد پولیس کی معانت کرنے کی ہدایت کی ہے۔ واضح رہے کہ فیصل رضا عابدی 2009ءسے 2013ءتک پیپلزپارٹی کے ٹکٹ پر سینیٹر رہے، اس دوران وہ کئی قائمہ کمیٹیوں کے رکن بھی رہے۔ فیصل رضا عابدی پاکستان پیپلزپارٹی کراچی ڈویڑن کے صدر رہے ہیں، تاہم پارٹی سے اختلاف کے باعث وہ پارٹی رکنیت سے مستعفی ہوگئے تھے۔


ای پیپر