دبئی میں مقیم پاکستانیوں کیلئے خطرے کی گھنٹی بج گئی
28 ستمبر 2018 (19:19) 2018-09-28

اسلام آباد:حکومت نے متحدہ عرب امارات میں مقیم پاکستانیوں کی جائیداد اور ٹیکس کی تفصیلات کیلئے نوٹس بھیجنے کا فیصلہ کرلیا ہے، پہلے مرحلے میں جائیدادوں کے2700 مالکان میں سے300 سے400 افراد کونوٹسزبھیجے جائیں گے، ان افراد سے پوچھا جائے گا کہ جس ملک سے پیسا کمایا اس ملک میں پیسے پرٹیکس ادا کیا گیا یا نہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق متحدہ عرب امارات میں جائیدادوں کے پاکستانی مالکان کو نوٹس بھیجنے کیلئے اجلاس ہوا۔ جس میں ایف بی آر‘ ایس ای سی پی‘ نیب اور ایف آئی اے حکام نے شرکت کی۔ اجلاس میں متحدہ عرب امارات میں پاکستانیوں کی جائیدادوں کے معاملے پرحکومت نے اہم اقدام اٹھانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت نے متحدہ عرب امارات میں مقیم پاکستانیوں نے جائیداد اور ٹیکس کی تفصیلات کیلئے نوٹس بھیجنے کا فیصلہ کرلیا ہے،پہلے مرحلے میں جائیدادوں کے2700 مالکان میں سے300 سے400 افراد کونوٹسزبھیجے جائیں گے۔ان لوگوں کونوٹسزبھیجے جا رہے ہیں جن کے نام پر 6 یا اس سے زیادہ جائیدادیں ہیں۔ پہلےمرحلے میں جائیدادوں کے 400 افراد کو نوٹسز بھیجنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

ان 300 سے 400 افراد میں پاکستان کےرہائشی، اوورسیز پاکستانی شامل ہیں۔ ان افراد سے پوچھا جائے گا کہ جس ملک سے پیسا کمایا اس ملک میں پیسے پرٹیکس ادا کیا گیا یا نہیں۔ ذرائع نے مزید بتایا کہ جائیدادوں کے مالکان سے ذرائع آمدن اور اس سے متعلق ٹیکس کا پوچھا جائے گا۔ اوورسیزپاکستانیوں سے یہ بھی پوچھا جائے گا کہ انہوں نے کس ملک سے یہ پیسا کمایا؟ اسی طرح ان سے پوچھا جائے گا کہ جس ملک سے پیسا کمایا اس ملک میں پیسے پرٹیکس ادا کیا گیا یا نہیں۔


ای پیپر