Indian Spy,Pakistan,India,Islamabad High Court
28 اکتوبر 2020 (22:32) 2020-10-28

اسلام آباد :پاکستان نے جاسوسی کے الزام میں ملوث پانچ بھارتی قیدیوں کو رہا کر نےکا حکم دیدیا ،اسلام آباد ہائی کورٹ میں چیف جسٹس اطہر من اللہ نے پاکستان میں قید بھارتی شہریوں کی رہائی کیلئے دائر درخواستوں پر سماعت کی جہاں حکومت نے اپنی پورٹ جمع کرادی۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان میں دہشت گردی اور جاسوسی میں ملوث بھارتی قیدیوں کے معاملے پر وزارت داخلہ کی رپورٹ میں کہا گیا کہ پاکستان نے 5 بھارتی قیدیوں کو رہا کر کے واپس بھارت بھیج دیا ہے،ڈپٹی اٹارنی جنرل طیب شاہ نےعدالت کو بتایا کہ بھارتی شہریوں کو سزا مکمل ہونے پر26 اکتوبر 2020 کو رہا کردیا گیا تھا،اس موقع پر وزارت داخلہ کا نمائندہ بھی عدالت میں پیش ہوا ۔

بھارتی ہائی کمیشن کی طرف سے پیش ہونے والے وکیل نے عدالت کو بتایاجیل میں ابھی بھی تین بھارتی قیدی موجود ہیں جو اپنی سزا مکمل کر چکے ہیں لیکن انہیں رہا نہیں کیا گیا،چیف جسٹس اطہر من اللہ نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ جب سزا مکمل ہو گئی ہے تو پھر آپ کیسے ان کو مزید قید میں رکھ سکتے ہیں، جس ڈپٹی اٹارنی جنرل نے کہا کہ چند قیدیوں کا معاملہ ریویو بورڈ کے پاس ہے۔

عدالت نے استفسار کیا کہ جب سزا مکمل ہو گئی تو ریویو بورڈ درمیان میں کہاں سے آگیا، اگر انہوں نے سزا مکمل کر لی ہے تو ان کو واپس بھیج دیں۔

پاکستان نے جاسوسی میں ملوث بھارت کے 5 قیدیوں کو سزا مکمل کرنے پر رہا کر دیااور تین کی رہائی کا حکم دیدیا گیا۔


ای پیپر