نواز شریف میں بہت صبر ہے : مشاہد اللہ
28 نومبر 2019 (23:34) 2019-11-28

اسلام آباد:مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما اور سینیٹر مشاہد اللہ خان نے کہا ہے کہ عدالت کے فیصلے کے بعد اس حکومت کے اگر پہلے 30دن تھے تو اب15 رہ گئے،جی کا جانا ٹھہر گیا، صبح گیا کہ شام۔

پارلیمنٹ ہائوس میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ (ن) کے سینیٹر مشاہد اللہ خان نے کہا کہ نوازشریف کے ساتھ جو زیادتیاں ہوئیں وہ چشم فلک ہیں، نوازشریف میں بہت صبر ہے ،نوازشریف نے اپنا مقدمہ اللہ کی عدالت میں پیش کردیا تھا ، ہمارے لیڈر نے صبر کیا ،جب کوئی شخص صبر کرتا ہے اور اللہ اس کا حساب کتاب ضرور لیتا ہے ، اللہ جب انصاف کرنے پر آتاہے تو وہ پوری دنیا کو نظر آتا ہے ، آج وہ انصاف نظر آیا ۔عدالت تین دن سے فروغ نسیم کو کہہ رہی ہے کہ فلاں کاغذ لے کے آئیں اوروہ ہر بار غلط کاغذ لے جاتا ہے۔

مشاہد اللہ خان نے کہا کہ فروغ نسیم نے ماضی میں یہ بھی لکھ کہ دیا تھا کہ وہ پرویز مشرف کو پیش کریں گے ،فروغ نسیم پرویز مشرف اور الطاف حسین کا وکیل رہا ہے ،فروغ نسیم نے کہا تھا کہ نیلسن منڈیلا کے بعد کوئی لیڈر ہے تو وہ الطاف حسین ہے جس کی اس نے آج تک تردید نہیں کی ، سپریم کورٹ بار بار انہیں کہہ رہی ہے مگر وہ ہر بار غلط کاغذ بنا کر لے جاتے رہے ۔

مشاہد اللہ نے کہا کہ  نوازشریف کے ساتھ جو زیادتیاں ہوئیں وہ چشم فلک ہیں،نوازشریف نے صبر کیا اور اپنا مقدمہ اللہ کی عدالت میں پیش کردیا تھا ،جب کوئی شخص صبر کرتا ہے تو اللہ اس کا حساب ضرور لیتا ہے ، اللہ جب انصاف کرنے پر آتاہے تو وہ پوری دنیا کو نظر آتا ہے ، آج وہ انصاف نظر آیا،حکومت نے فروغ نسیم کو آگے لگایا ہوتا ہے جو واردات ڈالنے سے باز ہی نہیں آرہا۔


ای پیپر