اسلام آباد ہائیکورٹ نے سی ڈی اے سے جواب طلب کر لیا
28 نومبر 2019 (20:10) 2019-11-28

اسلام آباد: اسلام آباد ہائی کورٹ نے تحریک انصاف کے رہنما علیم خان کی ہاوسنگ سوسائٹی کے خلاف مبینہ قبضہ کیس میں آئندہ جمعے تک سی ڈی اے سے جواب طلب کرتے ہوئے متنازع اراضی کے استعمال کو تاحکم ثانی روک دیا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے علیم خان کی ہاسنگ سوسائٹی کے خلاف مبینہ قبضے کے کیس کی سماعت کی۔ چیئرمین سی ڈی اے عامر علی احمد ذاتی حیثیت میں عدالت میں پیش ہوئے۔چیئرمین سی ڈی اے نے عدالت سے استدعا کی کہ زمین ایکوائر کرنے اور این او سی کا معاملہ دیکھنے کے لیے کچھ وقت دیں جس پر چیف جسٹس اطہر من اللہ نے استفسار کیا حاصل اراضی نجی شخص کو کیوں اور کس نے دی؟چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے ریمارکس دیے کہ وزیراعظم نے کہا کہ قانون کی حکمرانی ہونی چاہیے۔

 بابراعوان نے کہا کہ کام موجودہ وزیراعظم کے دورمیں ہوا تو وکالت نامہ واپس لیتا ہوں جس پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ کام جس کے دورمیں بھی ہوا لیکن ٹھیک نہیں ہوا۔بابر اعوان نے کہا کہ مجھے سن لیں میں متاثرہ فریق ہوں، چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ اس ملک کے لوگ اس معاملے میں سب سے زیادہ متاثرہ ہیں، شفاف ٹرائل ہر کسی کے لیے ضروری ہے۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ کیس وزیراعظم کو بھیج کرسیکرٹری سے رپورٹ طلب کر لیتے ہیں جس پر بابر اعوان نے کہا کہ آپ کیس وزیراعظم کو نہ بھیجیں خود فیصلہ کریں۔بعدازاں اسلام آباد ہائی کورٹ نے آئندہ جمعے تک سی ڈی اے سے جواب طلب کرتے ہوئے متنازع اراضی کے استعمال کو تاحکم ثانی روک دیا۔


ای پیپر