امریکی کورونا کی ویکسین سے مایوس
28 May 2020 (16:07) 2020-05-28

واشنگٹن : کورونا وائرس کی ویکسین کی تیاری کے لیے دنیا بھر کے طبی محققین نے جس سر دھڑ کی بازی لگائی ہوئی ہے، اس کے مقابلے میں عام شہری بہت زیادہ پرامید نظر نہیں آتے۔

تفصیلات کے مطابق امریکہ میں  ایک تازہ سروے میں بتایا گیا ہے کہ امریکی شہریوں کی محض نصف آبادی کو ویکسین ملنے کی امید ہے۔امریکا میں لوگوں کا خیال ہے کہ اگر سائنسدان کورونا کی ویکسین بنانے میں کامیاب ہو بھی جائیں تو بمشکل نصف امریکی عوام کو یہ ویکسین میسر ہو پائے گی۔31 فیصد امریکی یقین سے نہیں کہہ سکتے کہ آیا انہیں یہ ویکسین میسر ہوگی۔ جبکہ سروے میں حصہ لینے والے ہر پانچ میں سے ایک شہری نے کہا کہ وہ ویکسین لگوانے سے انکار کرے گا۔ 10 میں سے 7 امریکیوں نے یہ بھی کہا کہ انہیں ویکسین کی سیفٹی کے بارے میں تحفظات ہیں۔

طبی ماہرین پہلے سے اس بارے میں اپنی تشویش کا اظہار کر رہے ہیں کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی طرف سے آئندہ جنوری تک 300 ملین ویکسین کی دستیابی میں ناکامی کے بعد کیا ہوگا۔ نیشول ٹینیسی میں قائم وانڈربلٹ یونیورسٹی میڈیکل سینٹر کے ماہر متعدی امراض ڈاکٹر ولیم شافنر کے مطابق، بہترہوتا کہ کم تعداد میں ویکسین کا وعدہ کرکے زیادہ تعداد فراہم کی جاتی۔


ای پیپر