file photo

ماڈل عظمیٰ خان پر تشدد کا مقدمہ لاہور کے تھانہ ڈیفنس بی میں درج
28 May 2020 (10:21) 2020-05-28

لاہور: ماڈل عظمیٰ خان پر تشدد کا مقدمہ لاہور کے تھانہ ڈیفنس بی میں درج، مقدمے میں آمنہ ملک، پشمینہ ملک اور عنبر ملک سمیت 15 نا معلوم افراد نامزد۔

اداکارہ کی درخواست پر دونوں خواتین کا میڈیکل کرالیا گیا، ماڈل عظمیٰ خان نے پولیس کو بتایا دونوں بہنیں اعتکاف سے اٹھی تھیں، حملہ آور زبردستی گھر میں داخل ہوئے، توڑ پھوڑ کی، حملہ آور خاتون نے ان کی بہن کو سر پر بوتل مار کر زخمی کیا۔ اداکارہ کے مطابق ان کی عثمان ملک سے دو سال سے دوستی تھی۔

ادھر واقعہ کی وجہ بننے والے عثمان ملک کی اہلیہ آمنہ عثمان بھی منظر عام پر آگئیں، ویڈیو بیان میں شوہر کو واقعہ کا ذمہ دار قرار دیدیا۔

ماڈل عظمیٰ خان پر تشدد اور گھر پر حملہ کا معاملہ سوشل میڈیا پر زیر بحث آیا تو چیئرمین بحریہ ٹاؤن ملک ریاض نے واقعہ سے لاتعلقی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ عثمان ملک نامی کوئی شخص ان کا بھانجا نہیں۔

دوسری جانب ڈی آئی جی آپریشنز رائے بابر سعید نے کہا واقعہ کا مقدمہ درج ہو گیا ہے، تفتیش میرٹ پر ہو گی اور ذمہ داروں کیخلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائیگی۔


ای پیپر