آسٹریلوی کپتان سمتھ اور وارنر پر پابندی عائد کر دی گئی
28 مارچ 2018 (17:52) 2018-03-28

میلبورن:آسٹریلین کرکٹ بورڈ نے بال ٹیمپرنگ میں ملوث دستبردار آسٹریلوی کپتان اسٹیون اسمتھ اور نائب کپتان ڈیوڈ وارنر پر ایک ایک سال جبکہ بلے باز کیمرون بینکرافٹ پر 9 ماہ کی پابندی عائد کردی۔ کرکٹ آسٹریلیا کے چیف ایگزیکٹو جیمز سدر لینڈ نے گزشتہ روز تینوں کرکٹرز کو معطل کرتے ہوئے انہیں جنوبی افریقہ سے واپس وطن بھیجنے کی ہدایت کی تھی جبکہ تینوں کھلاڑیوں کی سزاﺅں کے حوالے سے انہوں نے آئندہ 24 گھنٹے اہم قرار دئیے تھے۔جیمز سدرلینڈ نے ٹیم کے کوچ ڈیرن لہمن کو کلئیر قرار دیتے ہوئے کام جاری رکھنے کی ہدایت کی تھی۔

آسٹریلین ٹیم کے چیف ایگزیکٹو کا کہنا تھا کہ بال ٹیمپرنگ کھیل کی روح کے منافی ہے اور ایسا ہونا آسٹریلین کرکٹ کے لئے مایوس کن ہے۔معطل کھلاڑیوں کی جگہ میکس ویل، جائے برنز اور میتھیو رینشا کو جنوبی افریقہ کے خلاف چوتھے ٹیسٹ کے لئے کیپ ٹاﺅن بلایا گیا ہے جب کہ ٹم پین قیادت کے فرائض انجام دیں گے۔یاد رہے کہ جنوبی افریقہ کے خلاف تیسرے ٹیسٹ کے تیسرے روز آسٹریلوی بلے باز کیمرون بینکروفٹ فیلڈ کے دوران بال ٹیمپرنگ کرتے ہوئے پکڑے گئے تھے جس کے بعد انہوں نے کپتان اسٹیون اسمتھ کے ہمراہ پریس کانفرنس کے دوران اعتراف جرم کیا۔

اسمتھ نے اعتراف کیا کہ انہیں بال ٹیمپرنگ سے متعلق علم تھا اور یہ دانستہ طور پر کیا گیا۔آسٹریلوی کرکٹ بورڈ نے بال ٹیمپرنگ میں ملوث آسٹریلیا کے دستبردار کپتان اسٹیون اسمتھ اور نائب کپتان ڈیوڈ وارنر پر ایک سال کی پابندی عائد کردی جبکہ کیمرون بینکرافٹ پر 9 ماہ کی پابندی عائد کی گئی ہے۔اس کے علاوہ وارنر اور اسمتھ پر 3 سال کے لیے آسٹریلوی ٹیم کی کپتانی پر بھی پابندی کی گئی ہے۔آسٹریلوی کھلاڑیوں کے بال ٹیمپرنگ میں ملوث ہونے میں قوانین کی خلاف ورزی یا کھیل کو نقصان پہنچانے کے لئے سنجیدگی کے تعین کے بعد کھلاڑیوں کو سزا سنائی گئی ہے۔


ای پیپر