Source : Yahoo

این اے 67 جہلم: فواد چوہدری کو الیکشن لڑنے کی اجازت مل گئی
28 جون 2018 (15:41) 2018-06-28

لاہور: ہائیکورٹ نے الیکشن ٹریبونل کا فیصلہ معطل کرتے ہوئے فواد چوہدری کو ان کے آبائی حلقے سے الیکشن لڑنے کی اجازت دے دی جبکہ عدالت نے الیکشن کمیشن اور ٹریبونل سمیت دیگر فریقین کو بھی نوٹس جاری کرتے ہوئے ان سے 3 جولائی کو جواب طلب کرلیا۔ لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس مظاہر اکبر نقوی کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے فواد چوہدری کی اپیل پر سماعت کی۔

فواد چوہدری کے وکیل کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا کہ اپیلٹ ٹربیونل نے حقائق کے برعکس کاغذات نامزدگی مسترد کیے، اپلیٹ ٹربیونل کے مطابق اثاثہ جات کی تفصیلات فراہم نہیں کی گئی جب کہ کاغذات نامزدگی میں ایف بی آر کی مصدقہ کاپی منسلک کی گئی تھی لہذا اپیلٹ ٹربیونل کے فیصلے کو کالعدم قرار دے کر الیکشن لڑنے کی اجازت دی جائے۔

عدالت عالیہ نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد این اے 67 سے فواد چوہدری کے کاغذات نامزدگی مسترد ہونے کے خلاف اپیلٹ ٹربیونل کے فیصلے کو معطل کر دیا۔ عدالت نے الیکشن کمیشن اور ٹریبونل سمیت دیگر فریقین کو بھی نوٹس جاری کرتے ہوئے ان سے 3 جولائی کو جواب طلب کرلیا اورسماعت ملتوی کردی۔واضح رہے کہ الیکشن ایپلٹ ٹریبونل نے گزشتہ روز ترجمان تحریک انصاف فواد چوہدری کے ان کے آبائی حلقے این اے 67 جہلم سے کاغذات مسترد کیے تھے جسے انہوں نے لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کیا تھا۔


ای پیپر