موبائل فون کا بزنس متاثر ،ہواوے کا الیکٹرک گاڑیاں بنانے کا منصوبہ
کیپشن:   موبائل فون کا بزنس متاثر ،ہواوے کا الیکٹرک گاڑیاں بنانے کا منصوبہ سورس:   فائل فوٹو
28 فروری 2021 (19:16) 2021-02-28

بیجنگ : چین کی موبائل فون بنانے والی کمپنی ہواوے نے امریکی پابندیوں کے نتیجے میں اسمارٹ فون بزنس متاثر ہونے کے بعد الیکٹرک گاڑیوں کو تیار کرنے کی منصوبہ بندی شروع کردی ہے۔

برطانوی نیوز ایجنسی رائٹرز کے مطابق ہواوے کی اولین الیکٹرک گاڑیوں کے چند ماڈلز رواں سال ہی متعارف کرائے جاسکتے ہیں۔ ہواوے کی جانب سے چونگ چنگ چین گن آٹوموبائل کارپوریشن اور دیگر کمپنیوں کے پلانٹس میں الیکٹرک گاڑیوں کی پروڈکشن کے لیے مذاکرات کیے جارہے ہیں۔رائٹرز سے بات کرتے ہوئے ہواوے کے ترجمان نے الیکٹرک گاڑیوں کے ڈیزائن یا ان کی تیاری کے منصوبے کی تردید کی۔

بعد ازاں بلومبرگ سے بات کرتے ہوئے کمپنی کے ایک نمائندے نے بتایا کہ ہواوے گاڑیاں تیار کرنے والی کمپنی نہیں اور اس کا مققصد کمپنیوں کو پرزہ جات فراہم کرنا ہے۔

خیال رہے کہ 2020 کی دوسری سہ ماہی کے دوران ہواوے نے سام سنگ سے دنیا کی نمبرون اسمارٹ فون کمپنی کا اعزاز چھین کر اپنے نام کیا تھا۔

تاہم امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے عہد میں عائد کی جانے والی پابندیوں کے نتیجے میں ہواوے کو اہم ترین پرہ جات کی سپلائی میں مشکلات سامنا ہے۔

ہواوے کے بانی زین زینگ فائی نے حال ہی میں کہا تھا کہ کمپنی کی جانب سے اسمارٹ فونز کی تیاری جاری رکھی جائے گی، حالانکہ کمپنی نے گزشتہ برس کے اختتام پر اپنے بجٹ آنر برانڈ کو فروخت کردیا تھا۔

رائٹرز کے مطابق الیکٹرک گاڑیوں کی تیاری کے لیے ہواوے کی جانب سے BAIC گروپ سے بھی بات چیت کی جارہی ہے۔ہواوے کی جانب سے ماضی میں الیکٹرک گاڑیوں کے سافٹ ویئر سسٹمز، سنسرز اور 5 جی کمیونیکشن ہارٖڈویئر تیار کیے جاتے رہے ہیں اور اس نے مختلف کمپنیوں جیسے جنرل موٹرز سے شراکت داری بھی کی۔


ای پیپر