game of thrones,got,Chinese,billionaire,maker,mysteriously
28 دسمبر 2020 (14:56) 2020-12-28

بیجنگ:گیمز آف تھرونز گیم کا بانی اور چینی ارب پتی گیم ڈویلپر پراسرار طور پر زہر خورانی سے ہلاک ۔ لن کی کرسمس والے دن فوت ہو گئے تھے جبکہ اب شنگھائی پولیس کا کہنا ہے کہ ان کی موت زہر خورانی سے ہوئی ہے۔ ان کی کمپنی نے مشہور زمانہ سیزن ’’گیم آف تھرونز‘‘ سے متاثر ہو کر اسی نام سے گیم بنائی تھی جس نے بھی تاریخی کامیابی حاصل کی تھی۔ 

شگھائی پولیس کے تصدیق کی کہ 39 سالہ چینی ٹائیکون لن کی کی کرسمس کے روز ڈرامائی طور پر موت ہوئی جو زہر کھانے سے انتقال کرگئے۔لِنکی گیمز ڈیولپر کمپنی یوزو کے چیئرمین اور چیف ایگزیکٹو تھے جب کہ مقبول ترین ٹی وی شو اور ناول گیم آف تھرونز پر مبنی گیم ان کی شہرت کی وجہ تھی۔پولیس نے لِن کے ایک ساتھی پر شک ظاہر کیا ہے جس کی شناخت صرف اس کی عرفیت ژو سے ہوئی ہے۔

لِنکی کا شمار چین کی امیر ترین شخصیات میں ہوتا تھا جن کی دولت اندازا 1.3 بلین ڈالرز ہے۔لن کی کی کمپنی نے گیمنگ انڈسٹری میں انتہائی کامیابی حاصل کی۔وہ خود چند روز قبل طبیعت ناساز ہونے پر اسپتال میں داخل ہوئے تھے مگر اس وقت ان کی حالت بہتر تھی۔کرسمس ڈے پر ڈرامائی طور پر ان کی موت کی خبر سامنے آئی اور قیاس آرائیاں کی جارہی ہیں کہ لِنکی کو چائے میں زہر ملاکر دیا گیا تھا۔ لِنکی کی موت کی زیادہ تفصیلات موجود نہیں البتہ شبہ ہے کہ انہیں زہر دیا گیا ہے۔


ای پیپر